محکمے نے ٹریفک پولیس کو افطار سے ہی محروم کر دیا

کراچی : کراچی ٹریفک پولیس کو محکمے کی جانب سے افطار سے محروم کر دیا گیا ۔

اس سال ماہ رمضان کے موقع پر کراچی ٹریفک پولیس کو افطاری سے محروم کر دیا گیا ہے ۔ ٹریفک کو کنٹرول کرنے کا سخت گیر کام کرنے والے ٹریفک اہلکاروں کو محکمے کی جانب سے افظار کے لئے شہریوں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے ۔

گزشتہ کئی سالوں سے ماہ رمضان کے موقع پر ٹریفک پولیس کو باقاعدگی سے افطاری دی جاتی تھی ۔ جس میں ایک پانی کی بوتل ، بریانی اور کھجور موجود ہوتی تھیں ۔ لیکن اس سال رقم نہ ہونے کا بہانا کر دیا گیا ۔ جب کہ کراچی ٹریفک پولیس سندھ حکومت کو سب سے زیادہ ریونیو جمع کر کے دینے والی فورس ہے ۔

مذید پڑھیں :راولپنڈی : TLP کی حمایت پر جنرل (ر) حمید گل کے بیٹے عبد اللہ گل کیخلاف مقدمہ درج

جس کے باوجود ٹریفک پولیس کو رمضان میں بھی شہریوں کی جانب دیکھنے اور ان سے افطاری لینے کے لئے چھوڑ دیا گیا ہے ۔ جس کی وجہ سے متعدد خود دار ٹریفک اہلکار ہاتھ کسی کے سامنے نہیں کرتے اور خود داری میں اپنی ذمہ ادا کرتے ہیں ۔

افطاری سے کچھ ماہ پہلے پی ایس ایل کے موقع پر صبح شام ان کو کھانا دیا گیا ۔ لیکن نیکی کے ٹائم پر ان لوگوں کو شہریوں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے ۔ شہر بھر کے ٹریفک اہلکاروں نے ایڈیشنل آئی جی کراچی اور ڈی آئی جی ٹریفک سے پر زور مطالبہ کیا ہے کہ ہر سال کی طرح اس سال بھی ہمیں سرکاری طور پر افطاری دی جائے تاکہ ہمیں شہریوں کے آگے ہاتھ نہ پھیلانا پڑیں ۔ ہمیں شہریوں کے رحم و کرم سے ہٹا کر ہماری سرکاری حق دیا جائے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *