تحریکِ لبیک پر پابندی غیر جمہوری و غیر آئینی ہے : علامہ حزب اللہ جکھرو

سعد حسین رضوی

کراچی : جمعیت اتحاد العلماء سندھ کے ناظم اعلیٰ علامہ حزب اللہ جکھرو نے تحریک لبیک پاکستان پر حکومت کی جانب سے پابندی عائد کرنے والے فیصلے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پابندی کسی بھی مسئلے کا حل نہیں ہے یہ غیر جمہوری و غیر آئینی اقدام ہے ۔

حکومتی جارحاہانہ اقدامات سے لگ رہا ہے کہ وہ بوکھلاہٹ کا شکار ہے، ایک دن ایک بات اور دوسرے دن دوسری بات کی جا رہی ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ محترمہ بینظیر بھٹو کے شہادت کے موقع پر اس سے کئی گنا زیادہ جلاءگھیراءاور پرتشدد واقعات ہوئے تھے اس پر تو حکومت نے کسی پارٹی پر پابندی اور کوئی مقدمہ درج نہیں کیا گیا تھا مگر تحفظ ناموس رسالت صہ کیلئے نکلنے والے شمع رسالت کے پروانوں کی گرفتاریاں ومقدمات نہ صرف قابل مذمت عمل بلکہ ریاست مدینہ کے دعویدار حکمرانوں کے منافقانہ کردار کی عکاسی ہوتی ہے ۔

مذید پڑھیں :علماء مشائخ فیڈریشن کا حکومت اور TLP کے درمیان تصفیہ کرانے کا اعلان

انہوں نے آج ایک بیان میں مزید کہا کہ فرانسیسی سفیر کے ملک بدری کا فیصلہ حکومت نے خود معاہدے کی صورت میں کیا تھا اس پر عمل درآمد اس کی ذمہ داری ہے، پرامن احتجاج ہرشہری کا بنیادی حق ہے۔

انہوں نے کہا کہ ملک اس وقت نازک دور اور عوام مہنگائی کے طوفان سے دوچار ہیں مہنگائی اور اپنی نااہلی کو چھپانے کیلئے حکومت جان بوجھ کر اس طرح کے حالات پیدا کر رہی ہے تاکہ اصل مسائل سے عوام کی توجہ ہٹائی جاسکے اسلئے حکومت ہوش کے ناخن لے ،معاہدے کی پاسداری انتشار و انارکی کی صورت حال پیدا کرنے کی بجائے معاملات کو افہام وتفہیم کے ساتھ حل کیا جائے تحریک لبیک کے تمام گرفتار کارکنان کو رہا کیا جائے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *