جامعہ کراچی کے اساتذہ سینٹرز، انسٹی ٹیوٹس میں ریٹائرڈ ڈائریکٹرز کی تقرری کے خلاف میدان میں آگئے

رپورٹ : اختر شیخ

جامعہ کراچی کے سینٹرز اور انسٹی ٹیوٹ میں غیر قانونی اقدامات کے خلاف کمیٹی کی تشکیل دے دی گئی ،سینٹرز اور انسٹی ٹیوٹ میں ریٹائرڈ ڈائریکٹر ز کی تقرری پر اساتذہ متحد ہوگئے . انجمن اساتذ نے بھر پور مزاحمت کا فیصلہ کرلیا گیا .

جامعہ کراچی کے سینٹرز اور انسٹی ٹیوٹ میں غیر قانونی اقدامات کے خلاف کمیٹی کی تشکیل، سینٹرز اور انسٹی ٹیوٹ میں ریٹائرڈ ڈائریکٹر ز کی تقرری پر اساتذہ متحد ہوگئے، بھر پور مزاحمت کا فیصلہ کرلیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق جامعہ کراچی کے سینٹرز اور انسٹی ٹیوٹ کی غیر یقینی اور ابتر صورتِحال پر ممبران سینڈیکیٹ، سینیٹ، اساتذہ و ملازمین اور سینٹرز و انسٹی ٹیوٹس کے اسٹاف کا غیر معمولی اجلاس گذشتہ روز اسٹاف کلب میں ہوا۔اجلاس میں قراردادیں پیش کی گئی جو متفقہ طور پر منظور کی گئی۔

منظور کی گئی قرارداد کے مطابق جامعہ کراچی میں قائم سینٹرز اور انسٹی ٹیوٹ کے مروجہ قوانین کو جامعہ ایکٹ 1972ء کی روشنی میں دوبارہ سے مرتب کیا جائے۔HEJاور KIBGEمیں ڈائریکٹرز کی ریٹائرمنٹ کے بعد غیر قانونی تقرری کو واپس لیا جائے۔ شیخ زید سینٹر میں قائم مقام ڈائریکٹر کی جانب سے بلائی جانے والی بی او جی اجلاس کو روکا جائے کیونکہ قائم مقام ڈائریکٹر کو بی او جی کا اجلاس بلانے کا اختیار ہی نہیں ہے اسی وجہ سے 16اکتوبر کو بلائی جانے والی بی او جی اجلاس غیر قانونی ہوگا۔ قرارداد میں سینٹرز اور انسٹی ٹیوٹ کی جانب سے اساتذہ، افسران اور ملازمین کی ترقیوں کے عمل کو جان بوجھ کر تاخیر کا شکار کرنے کی شدید مذمت کی گئی۔

اجلاس میں سینٹرز اور انسٹی ٹیوٹ میں بڑھتے ہوئے غیر قانونی اقدامات کو روکنے کے لیے ایک کمیٹی عمل میں لائی گئی جس کے ممبران میں منتخب اراکین سینڈیکیٹ، سینیٹ اور تمام سینٹرز اور انسٹی ٹیوٹ میں سے ایک ایک فرد کی نامزدگی کی گئی۔ آئندہ انجمن اساتزہ جامعہ کراچی کے منظور قرارداد وں پر عمل درآمد کرانے لیے یہ کمیٹی کلیدی کردار ادا کرے گی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *