کوئی ساتھ دے نہ دے عید کے بعد بھر پور تحریک چلائیں گے : JUI اعلان

تیمرگرہ : جمعیت علمائے اسلام نے عید الفطر کے بعد حکومت کے خلاف دوبارہ بھر پور تحریک چلانے کا اعلان کر دیا ۔ اگر پی ڈی ایم میں شامل دوسرے سیاسی جماعتوں نے سا تھ نہ بھی دیا توجمعیت علمائے اسلام حکومت کے خلاف تنہا تحریک چلانے نکلے گی ۔

موجودہ حکومت کی خارجہ اور معاشی پالیسوں سمیت تمام پالیسیاں ناکام ہو چکی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار پاکستان ڈیموکریٹک مومنٹ کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات، جمعیت علمائے اسلام کے مرکزی رہنما و سابق سنیٹر حافظ حمد اللہ اور جمعیت علمائے اسلام صوبہ سندھ کے جنرل سیکرٹری مولانا راشد خالد محمود سومرو نے جے ٹی آئی لوئر دیر کے زیر اہتمام تیمرگرہ ریسٹ گراؤنڈ پر دینی مدارس اور یونیورسٹیوں سے فارغ التحصیل 500 فضلاء کے ایک بڑے کانفرس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

کانفرنس سے مولانا سعید الرحمان ، جمعیت علمائے اسلام لوئر دیر کے امیر سراج الدین ، جنرل سیکرٹری جاوید اقبال ، جے ٹی آئی کے صوبائی صدر مولانا رحمت شہزاد ، ضلعی صدر لوئر دیر اسرا ر اللہ مظہری ، جنرل سیکرٹری مطیع اللہ قاسمی ، نامور اسکالر مولانا محمد رحیم حقانی ، مولانا قاضی فضل اللہ ، مولانا مفتی محسن محمود مباکرزئی ودیگر نے بھی خطاب کیا ۔

مزید پڑھیں :تابش گوہر پاکستان میں ساڑھے 9 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری میں رکاوٹ

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت مدینہ کی ریاست کا صرف نام استعمال کرکے قوم کو دھوکہ دیں رہی ہے ۔ عمران خان کی حکومت نے ملک کی معیشت کا بیڑہ غرق کر دیا ، ملک کی داخلی اور خارجہ پالیسیاں نا کام ہوچکی ہے ، سٹیٹ بینک کو آئی ایم ایف جبکہ مقبو ضہ کشمیر کو بھارت کے حوالہ کر دیا ، موجودہ حکومت کی نااہلی کی وجہ سے سی پیک منصوبہ بند کر دیا گیا اور اب چین نے ایران کے ساتھ 400 بلین ڈالرز کا سی پیک معا ہدہ کیا ۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت قانون سازی میں مکمل طور پر ناکا م ہو چکی ہے ۔قومی اسمبلی نے اب تک صرف آرمی چیف کو ایکسٹینشن اور ایف اے ٹی ایف قوانین کے لئے قانون سا زی کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم ملک کی آئین اور قانون کی بالا دستی اور ملک کی سلا متی اور دینی مدارس کی تحفظ اور قانون ناموس رسات کی تحفظ کی جنگ لڑرہی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان نے ایک کروڑ نوکریاں دینے کے بجائے 40 لاکھ افراد کو بے روز گار کر دیا ، ملک لنگر خانوں ، انڈے ، اور کٹوں سے چلا یا نہیں جاسکتا۔صوبہ سند ھ میں تجا وزات کی آڑ میں 20 لاکھ گھروں کو مسمار کرکے لو گوں کو بے گھر کر دیا جبکہ سندھ میں ایک رات میں19 مساجد کو بلڈوز کر دیا گیا ۔

مذید پڑھیں :پاکستان میں زکوٰۃ کا نصاب 80 ہزار 933 روپے مقرر

انہوں نے کہا کہ مو جودہ حکومت کی مو جودگی میں مساجد او ر مدارس کی بقا کو خطرہ ہے اور عمران خان مغرب کی ایجنڈا پر عمل پیرا ہو کر علماء کرام ، دینی مدارس ، داڑھی ، پگڑی اور دستار کے خلاف سازش کر رہا ہے لیکن جمعیت علمائے اسلام اس کی بھر پور مزاحمت کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ مولانا فضل رحمان کی قیادت میں امریکی ایجنٹوں کو شکست دیکر اسے بھگا ئینگے ، کہ ایک طرف دینی مدارس کے خلاف سازشیں کی جارہی ہے جبکہ دوسری طرف 28کروڑ روہے کی لاگت سے مند ر تعمیر کیا جا رہا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ جے یو ائی کے باغی ارکان کی کو ئی حیثیت نہیں وہ ملک دشمن عناصر کی اشا روں پر چل رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جے یو ائی نے جنرل ایوب خان ، ضیاء الحق ، یحیٰ خان کے خلاف تحریک چلائی اور ان کے سامنے سر نہیں جھکا یا اس لئے عمران خان کی کوئی حیثیت نہیں ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *