آڈیٹرجنرل آف پاکستان کے اعلی افسران کو بدنام کرنے کیلئے جعلی خبروں کا سہارا

رپورٹ: اختر شیخ

محکمہ آڈیٹر جنرل آف پاکستان کے خلاف سوشل میڈیا پرجعلی خبروں کا نوٹس لے لیا گیا ، بعض عناصر ذاتی مفاد کیلئے مختلف اخبارات کے نام پر جعلی خبریں پھیلا کر ادارے کو بدنام کررہے ہیں ، ادارے سے نکالے اور تبادلہ کئے گئے ملازمین کے شامل ہونے کا شبہ ظاہر کیا جارہا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ آڈیٹر جنرل آف پاکستان جاوید جہانگیراور ڈائریکٹر جنرل آڈٹ سندھ فتخ محمد قریشی کے خلاف سوشل میڈیا پر جعلی خبریں وائرل کی گئی ہیں ،جس میں ادارے کو بدنام کرنے کی کوشش کی گئی ہے ۔ جس پر آڈیٹر جنرل آف پاکستان کے آفس ڈی جی آڈٹ سندھ کے دیگر ایماندار افسران کے نام شامل کیئے گئے ہیں ۔

اخبار کی لوح لگاکر جعلی بنائی گئی خبر کا عکس

اس جعلی خبر میں آڈیٹر جنرل آف پاکستان جاوید جہانگیر پر بھی الزامات عائد کیئے گئے ہیں ۔آڈٹ افسران کی جانب سے اس حوالے سے متعلقہ اخبارات سے رجوع کرنے پر معلوم ہوا کہ ایسی کوئی خبر اخبارات میں شائع نہیں ہوئی ہے ۔اس حوالے سے ڈی جی آڈٹ سندھ فتح محمد قریشی نے اس کی سختی سے تردید بھی کی ہے ۔آڈٹ افسران کا کہنا ہے کہ نیب کے بعد سب سے بااثر قانونی ادارہ آڈیٹر جنرل آف پاکستان کا ادارہ ہے ، جس کو نیب کی طرح بدنام کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔

اخبارکی جانب سے وضاحتی خط کا عکس

معلوم رہے کہ آڈیٹر جنرل ملک کا ایک اہم ادارہ ہے جس کامقصد عوامی جوابدہی اور حکومتی معاملات میں شفافیت کو یقینی بنانا ہے۔ یہ ادارہ مالیاتی نظم و ضبط میں بہتری اورانتظامی محکموں میں دھوکہ اورنقصانات کے ممکنات میں کمی لانے کا خواہاں ہے۔آڈیٹر جنرل آف پاکستانی کی تقرری ملک کے آئین کے تحت کی جاتی ہے۔

آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی تقرری آئینی تقاضا ہے۔ ۔ اس کی فراہم کردہ اطلاعات قومی، صوبائی اور ضلعی اسمبلیوں میں پیش کی جاتی ہیں اور متعلقہ اسمبلی کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی میں ان پر غور کیا جاتا ہے۔اپنے اختیار کی بناء پر یہ ادارہ وفاقی اور صوبائی سطح پر ایک آزاد اور بامقصد تشخیص سے حکومتی عمل کے ذریعے ایک مضبوط قانون سازی کی بنیاد فراہم کرتا ہے۔

آڈیٹر جنرل کے بجٹ کی درجہ بندی ”چارج” اخراجات کے طور پر کی جاتی ہے۔ تمام چارج اخراجات پر پارلیمنٹ میں رائے شماری نہیں ہوتی جو ادارے کی خود مختاری کا واضح ثبوت ہے۔ تقریباََ 1500تربیت یافتہ افسران ادارے کو اس کے فرائض کی انجام دہی میں معاونت فراہم کرتے ہیں۔بطور اعلیٰ محاسب یہ ادارہ مساوی ملازمت کے مواقع فراہم کرتا ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *