بدین کی 21 سالہ لڑکی نے جامعہ بنوریہ العالمیہ میں اسلام قبول کر لیا

کراچی : جامعہ بنوریہ عالمیہ سائٹ میں 16 مارچ 2021 کو بدین سے 21 سالہ تعلیم یافتہ ہندو لڑکی کانتا والد کومن اسلام قبول کرنے کے لیے آئی، جس کو جامعہ بنوریہ کے شعبہ اعانت نومسلم نے کلمہ پڑھا کر دائرہ اسلام میں داخل کیا اور نام فاطمہ تجویز کیا۔

اس لڑکی نے بیان دیا کہ میں بالغ اور اپنے فیصلوں میں خود مختار ہوں اپنی مرضی سے اسلام قبول کیا، نومسلمہ نے پولیس کو بھی بیان دیا۔

تفصیلات کے مطابق 16 مارچ 2021 کو بدین کی مسمات کانتا دختر کومن جامعہ بنوریہ عالمیہ میں آئی اسلام قبول کرنے کی خواہش کا اظہار کیا ۔ جس پر جامعہ بنوریہ عالمیہ سائٹ شعبہ اعانت نومسلم نے لڑکی سے شناختی کارڈ اور اس کی عمر اور اسلام قبول کرنے کے حوالے سے تمام معلومات حاصل کی اور ان سے بیان لیکر مقامی تھانہ سائٹ میں جمع کرایا کہ جس میں لڑکی نے کہا ہے کہ وہ اپنی خوشی سے اسلام قبول کرنے کےلئے جامعہ بنوریہ آئی ہیں ان پر کسی قسم کا کوئی دباؤ نہیں ہے ۔

مذید پڑھیں : نثار خان تنولی کی بحیثیت KUJ صدر روزنامہ شمال کے دفتر کا اہم دورہ

لڑکی کا مزید کہنا تھا بدین واپس نہیں جانا چاہتی اگر گئی تو ان کی جان کو شدید خطرہ لاحق ہے،وہ جامعہ بنوریہ میں دینی تعلیم حاصل کرنا چاہتی ہیں، جب کہ گزشتہ روز بدین انتظامیہ لڑکی کو لیجانے جامعہ بنوریہ آئی جس پر فاطمہ نے پولیس کو بیان قلمبند کرایا ۔

اس  بیان میں لڑکی کا کہنا تھا کہ وہ اپنی خوشی سے اسلام قبول کرنے کراچی آئی ہیں ان کے اغواء کی ایف آر درست نہیں ہے اور وہ واپس بدین نہیں جانا چاہتی ہیں اگر واپس گئی تو جان کو خطرہ ہے اس لیے اس کو تحفظ فراہم کیا جائے، ایف آئی آر کو سی کلاس کرنے کے لیے جو بیان لینا ہے وہ ویڈیو لنک کے ذریعے لیا جائے، میں جامعہ بنوریہ عالمیہ میں رہ کر تعلیم حاصل کرنا چاہتی ہوں ، مجھ پر دباؤ ڈالا جا رہا ہے کہ میں واپس ہندو ہو جاؤں میں ایسا ہر گز نہیں چاہتی ۔

مذید پڑھیں : عامر لیاقت کے عشق میں ہانیہ خان کی خود کشی کی کوشش

اس کا کہنا تھا کہ میں ایک بالغ لڑکی ہوں 21 سال میری عمر ہے مجھے قانون اجازت دیتا ہے کہ میں اپنے فیصلے خود کروں میں نے بچپن سے ہی اسلام کا مطالعہ کیا ہے اور پہلے بھی اس حوالے سے اپنے گھر والوں آگاہ کیا کہ میں اسلام قبول کرنا چاہتی ہوں لیکن گھر والوں نے مجھے اجازت نہیں دی اور مجھے دھمکایا گیا تو بدین سے اسلام قبول کرنے کے لئے کراچی پہنچی ۔

نو مسلمہ فاطمہ نے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ بدین میں اس کے اغواء سے متعلق درج ایف آئی آر واپس لی جائے اور اسے اس کا قانونی حق دیا جائے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *