دارالعلوم جامعہ نعیمیہ کے فاضل علماء کو بے نیاز ہو کر دین کی خدمت کرنی چاہیے : مفتی منیب الرحمن

کرچی : دارالعلوم نعیمیہ کے فاضل طلبہ کا سالانہ 42 واں جلسہ دستارِ فضیلت گزشتہ روز جامع مسجد نعیمی ، بلاک 15 فیڈرل بی ایریا کراچی میں منعقد ہوا ، جس میں کثیر تعداد میں علماء و مشائخِ عظام نے شرکت کی ۔

فاضل علمائے کرام کو دستارِفضیلت پہنائی گئی اور جُبّہ پوشی کی گئی ۔تخصص فی الفقہ والافتاء کے فاضل مفتیان کرام ،شہادۃ العالمیہ کے فارغ التحصیل علماء ، تجوید القرآن اور شعبہئ تحفیظ القرآن کے طلبہ اور کمپیوٹر کورسز کے طلبہ سمیت مجموعی طورپر 300 طلبا فارغ التحصیل ہوئے ۔

اِس موقع پر ادارے کے مہتمم مفتیِ اعظم پاکستان مفتی منیب الرحمن نے اپنے خطاب میں کہا: دارالعلوم جامعہ نعیمیہ کی علمی خدمات مثالی ہیں اوریہ ایک ماڈل دینی ادارہ ہے ، فاضل علماء کو ہر طمع وحرص اورخوف وخطر سے بے نیازہوکر اخلاص کے ساتھ دین کی خدمت کرنی چاہئے ۔

مزید پڑھیں: سندھ مدرستہ الاسلام یونیورسٹی آفیسرز ایسو سی ایشن کی ایگزیکٹیو کمیٹٰی کا ہنگامی اجلاس

اُنہوں نے کہاکہ عظیم قوموں کے عروج اور ترقی کی داستانوں کے پیچھے علم کی طاقت نظر آتی ہے ۔فارغ التحصیل علماء کرام پر بھاری دینی اور ملی ذمے داریاں عائد ہوتی ہیں، جن سے عہدہ برآں ہونے کے لیے اُ نہیں اپنے کردار کو مثالی بنانا ہوگا ،اپنے علم کو تقویٰ کے عمل میں ڈھالنا ہو گا ۔

دیگر علماء میں مفتی محمد الیاس رضوی اشرفی ، علامہ مفتی محمد رفیق الحسنی ، مفتی محمدنذیر جان نعیمی ، مفتی محمد اسماعیل نورانی، صاحبزادہ ریحان امجد نعمانی ،علامہ لیاقت حسین اظہری ،مولانا اشرف الحامدی ،مولانا عبدالمجید ، قاری عبدالقیوم محمود ،مولانا عبداللہ نورانی ، مولانا محمد سفیان قادری ،علامہ اشرف گورمانی ،مولانا جہانگیر نقشبندی کے علاوہ ادبی وسماجی شخصیات ،دانشور اور اسکالرز بھی شریک ہوئے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *