لیاری یونیورسٹی میں DF نے کرنل (ر) عدنان عابد کے کپڑے پھاڑ دیئے

کراچی : شہید بینظیر بھٹو لیاری یونیورسٹی اکھاڑہ بن گیا ، افسران نے ایک دوسرے کے گریبان پکڑ لیئے ، ایک افسر کی شرٹ کے بٹن ٹوٹ گئے ۔

تفصیلات کے مطابق لیاری یونیورسٹی آئے دن مسائل کا گڑھ بنتی جا رہی ہے اور حکومت سندھ خاموش تماشائی بنے تماشہ دیکھنے میں مصروف ہے ۔

گذشتہ روز صبح کے وقت یونیورسٹی ریسلنگ کا اکھاڑہ بنتے دکھائی دی ، جب فنانس آفس کے سربراہ عبدالرشید ملاح اچانک رجسٹرار آفس میں گھس گئے اور رجسٹرار کرنل ( ریٹائرڈ ، تمغہ امتیاز ) عدنان عابد کو زدکوب کرنے کی کوشش کی ، اور بدکلامی کی ۔

جس کے بعد رجسٹرار کرنل عدنام عابد نے خود کو چھڑانے کی کوشش کی ، جس میں شرٹ کے بٹن ٹوٹ کر گر گئے ، تاہم ملازمین نے بیچ بچائو کرانے کی کوشش کی مگر عبدالرشید ملاح آپے سے باہر ہو گئے ، اور سخت لہجہ میں بدکلامی کرتے رہے۔ اس طرح تمام طلبا و طالبات بھی یہ تماشہ دیکھتے رہے ۔

دریں اثناء رجسٹرار عدنان عابد نے وائس چانسلر ڈاکٹر اختر بلوچ کو بھی شکایت کی کیونکہ وہ یونیورسٹی میں موجود نہیں تھے ۔ اس لیئے آخری اطلاعات تک یونیورسٹی کا ماحول سخت کشیدہ تھا ۔

آخری اطلاعات تک کلاکوٹ پولیس نے لیاری یونیورسٹی کے عبدالرشید ملاح کیخلاف NC کاٹ دی ہے اور مزید تفتیش کی جا رہی ہے ۔ تھانہ کلاکوٹ کی رپورٹ نمبر 44 کے مطابق بے نظیر بھٹو یونیورسٹی لیاری کے سیکورٹی انچارج بدر منیر ولد منیر احمد نے تھانے کو بتایا کہ یونیورسٹی میں ریٹائرڈ لیفٹیننٹ کرنل عدنان عابد اور خازن عبدالرشید ملاح نا معلوم وجوہ پر باہم دست و گریباں ہو گئے جس کی اطلاع جامعہ کے وائس چانسلر کو دے دی ہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *