آئیں آپ کو ایک فرعون سے ملوا دوں

تحریر : عارف خٹک


سلسلہ نمبر ایک

موصوفہ کا نام آسیہ صالح خٹک ہے۔ جو خیبر پختونخواہ ضلع کرک سے مخصوص خواتین نشست پر ایم پی اے منتخب ہوئی ہیں۔ موصوفہ آجکل ڈیڈاک کی چیئرپرسن ہیں۔ خود کو تحریک انصاف کی ورکر کہلوانا پسند کرتی ہیں۔ موصوفہ کھلم کھلا سرکاری فنڈ خردبرد میں ملوث ہیں۔ اس کے علاوہ مقامی کوٹے پر دی گیئں اسامیاں بھی بیچتی ہیں۔

دیدہ دلیری کا یہ عالم ہیں کہ اگر کوئی صحافی یا عام بندہ ان سے فنڈ خردبرد اور کرپشن پر بات کریں تو آگے سے استہزائیہ ہنسی کر کہتی ہیں کہ وہ “اپنی محنت” کے بل بوتے پر منتخب ہوئی ہیں لہذا وہ عوام کو جواب دہ نہیں ہے۔ واقعی میڈم کی محنتوں کے ہم بھی گواہ ہیں جو انھوں نے سیاہ رو شبوں میں پشاور اسلام آباد میں کیں ہیں۔

آسیہ خٹک کے خلاف کرپشن کے کافی ثبوت موجود ہیں جو حکومتی ذمہ دار اداروں تک دیئے گئے ہیں مگر موصوفہ کی “اپنی محنت” کیوجہ ادارے اور حکومت بھی خاموش رہنے پر مجبور ہیں۔ موصوفہ نے کرک کو بھی اپنا بیڈروم سمجھا ہوا ہے۔

موصوفہ کے کافی سارے ثبوت ہم اکھٹا کرچکے ہیں اگر آپ کے پاس بھی کوئی ثبوت ہیں تو بلاجھجھک ہم سے رابطہ کریں۔ ہم آپ کی آواز متعلقہ لوگوں تک پہنچائیں گے اور خان سے پوچھیں گے یہ تھا آپ کا نیا پاکستان اور تھا آپ کا وژن؟۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *