ثمینہ الطاف نے تمام حدیں عبور کرلیں، خواتین ٹیچرز کا ڈی ای او کی ضلع بدری کا مطالبہ

ثمینہ الطاف

ہری پور: اختیارات کا ناجائز استعمال ڈی ای او زنانہ ثمینہ الطاف نے تمام حدیں عبور کر لیں، آئے روز کی تذلیل پر فی میل ٹیچرز سراپا احتجاج ہیں۔

ثمینہ الطاف نے ہری پور و گرد نواح کے علاقوں میں قائم گرلز سکولوں کی ٹیچرز کی تذلیل معمول بنا لیا ثمینہ الطاف کی طرف آئے روز کی تذلیل پر فی میل ٹیچرز سراپا احتجاج ای ڈی او ثمینہ الطاف کو ضلع بدر کرنے کی اپیل کر رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ تعلیم ہری پور پر مسلط ای ڈی او زنانہ ثمینہ الطاف نے فی میل ٹیچرز کا عرصہ حیات تنگ کرنا شروع کر دیا فی میل ٹیچرز کے ساتھ نازیبا اور غیر اخلاقی رویہ بات بات پر دھمکیوں پر ضلع ہری پور فی میل ٹیچرز سراپا احتجاج ثمینہ الطاف گزشتہ کافی عرصہ سے غریب ٹیچرز کی تذلیل کو اپنی عادات میں شامل کر رکھا ہے ۔

سیاسی پشت پناہی کے باعث مزکورہ ای ڈی او کسی بھی ٹیچرز کو خاطر میں لانے کے بجائے ان کو ذاتی نوعیت کے طعنہ دینے میں تمام حدوں کو عبور کر چکی ہیں۔

گزشتہ روز ثمینہ الطاف کے مظالم سے تنگ فی میل ٹیچرز نے مزکورہ ای ڈی او کے خلاف احتجاج شروع کر دیا۔

ای ڈی او ثمینہ الطاف گزشتہ کافی عرصہ سے مختلف گرلز سکولوں میں تعنیات فی میل ٹیچرز کو مختلف طریقوں سے حراساں کرنا ان کی تذلیل کرنے میں راحت محسوس کرنے لگی ہیں۔

مذکورہ ای ڈی او کے ظلم و ستم سے متاثرہ فی میل ٹیچرز نے صوبائی و وفاقی وزیر تعلیم سے نام نہاد ای ڈی او ثمینہ الطاف کے خلاف قانونی کاروائی اور ضلع بدر کرنے کی اپیل کی ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *