سندھ بھر کے میٹرک کے امتحانات ملتوی ، یکم اپریل سے شروع ہونگے .وزیر تعلیم

وزیر تعلیم کے بڑے بیانات نے دس لاکھ سے زائد طلبہ کو طالبات کے امتحانات ملتوی کرادیئے ،وزیر تعلیم ،سیکرٹری بورڈ اینڈ یونیورسٹیز کی عدم توجہی کی وجہ سے سندھ بھر کے بورڈز کے ملازمین نے ڈیڑھ ماہ سے احتجاج جاری رکھا جن سے مذاکرات نہیں کئے گئے ، ملازمین کے مسلسل احتجاج کے پیش نظر کراچی سمیت سندھ بھر میں میٹرک کے امتحانات ملتوی کردیے گئے۔ ثانوی بورڈ کے امتحانات اب یکم اپریل سے ہوں گے ،تعلیمی بورڈ نیا شیڈول جاری کرے گا ۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ایجوکیشنل بورڈ کمیٹی کی جانب سے گزشتہ ڈیڑھ ماہ سے ڈاکٹر عاصم حسین کی مجوزہ ریگولیٹری اتھارٹی کے خلاف سراپا احتجاج تھے جن کے کسی بھی احتجاج کا کوئی نوٹس نہیں لیا گیا ،جس کی وجہ سے بورڈز کے امور بری طرح متاثر رہے ہیں ،تاہم وزیر تعلیم نے شروع سے ہی بڑے بڑے دعوے کئے جبکہ عملی طورپر کوئی بھی حل نہیں نکالا گیا ،جس کی وجہ سے گزشتہ روز سندھ بھر کے بورڈز کے ملازمین نے سندھ بورڈز ریگولیٹری اتھارٹی کمیٹی اور آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن اور لوئراسٹاف نے جمعہ کے روز کراچی پریس کلب پر احتجاج کیا،جس میں خواجہ اظہار الحسن ،فاروق ستار ،سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین شاہ سراج الحق ،سپلا ایکشن کمیٹی کے رہنما اسلم پرویز خاصضیلی کے علاوہ دیگر لوگ شریک تھے .

تاہم اس موقع پر وزیر تعلیم سندھ سردار شاہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ تعلیم کے ملازمین کی ہڑتال کے باعث امتحانات کی تیاری مکمل نہیں اس لئے سندھ بھرمیں میٹرک کے امتحانات ملتوی کردیے گئے ہیں اب صوبے بھرمیں امتحانات کا آغاز یکم اپریل سے ہوگا۔انہوں نے کہا کہ صوبے میں کوئی ریگولیٹری اتھارٹی بننے نہیں جارہی ہے میں وزیر تعلیم ہوں اگر ایسا کچھ ہوتا تو مجھے اعتماد میں لیا جاتا یا پھر کوئی نوٹیفکیشن جاری کیا جاتا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ریگولیٹری اتھارٹی کے حوالے سے صرف تجویز ہے اِس پر کوئی عمل نہیں ہورہا ہے میں یہی یقین دہانی کرانے آیا ہوں کہ ایسی کوئی ریگولیٹری اتھارٹی نہیں بن رہی اس لئے کسی کو پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ ملازمین نے احتجاج اسپیشل ایجوکیشن کے اسکولوں کو این جی او کے حوالے کرنے کیخلاف کیاہے ۔ایک سوال کے جواب میں اِن کا کہنا تھا کہ صوبہ بھر میں ایک ہی وقت پر نویں و دسویں کے امتحانات ہونگے اور یہ امتحانات یکم اپریل سے شروع کئے جائیں گے۔

دوسری جانب چیئرمین میٹرک بورڈ کراچی پروفیسر ڈاکٹر سعید الدین کا کہنا تھا کہ کراچی سمیت صوبہ بھر میں نویں و دسویں کے امتحانات یکم اپریل سے ہونگے نیا شیڈول جلد جاری کردیں گے۔ خیال رہے کہ گزشتہ روز حیدرآباد کے ناظم امتحانات ڈاکٹر مسرور زئی نے بھی نویں اور دسویں جماعت کے 25 مارچ سے شروع ہونے والے امتحانات ملتوی کرنے کا اعلان کیا تھا۔

ڈاکٹر مسرور زئی نے کہا تھا کہ صوبائی حکومت نے سندھ ایجوکیشن بورڈز ریگیولیٹری اتھارٹی قائم کر کے صوبے کے تمام تعلیمی بورڈز کو ریگولیٹری اتھارٹی کے ماتحت کر دیا ہے تاہم حیدرآباد کے تعلیمی بورڈ کے ملازمین اسے بورڈز کی خود مختاری کے خلاف سازش قرار دے رہے ہیں۔اس حوالے سے کمیٹی کے چیئرمین اعجاز علی کاکا اور سینئر وائس چیئرمین شکیل احمد کا کہنا ہے کہ ہم نے ڈاکٹر عاصم حسین کی ریگولیٹری اتھارٹی کے خلاف ڈیڑھ ماہ قبل احتجاج کیا تھا ہم سے کسی نے بھی کوئی رابطہ نہیں کیا جس کی وجہ سے آج یہ دن دیکھنا پڑا ہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *