باہر سے آنے والے افسران نے واٹر بورڈ کو لوٹا ہے ،لیبر لیڈر محسن رضا

ایم ڈی واٹربورڈاسد اللہ خان کی تقرری واٹربورڈ ،ملازمین خصوصا ً شہریوں کے بہتر مفاد میں ہے ،ماضی میں واٹربورڈ سے باہر سے لائے گئے ادارے کے سربراہان کی وجہ سے کراچی کو پانی کی فراہمی کے میگا پروجیکٹس، عظم ترمنصوبہ نکاسی آب سمیت دیگر منصوبے تعطل کا شکارہوئے ،اسداللہ خان سے واٹربورڈ ملازمین خصوصاً شہریوں کو بڑی امیدیں وابستہ ہیں ، نئے ایم ڈی واٹربورڈ کو اپنے بھرپور تعاون کا یقین دلاتے ہیں ،

ان خیالات کا اظہار پیپلز لیبریونین واٹربورڈ کے جزل سیکریٹری محسن رضا نے یونین کے صدر لیاقت مگسی، جو ائنٹ سیکریٹری خورشید مہدی،شہاب حسین،یعقوب حسین، رخدان اللہ ،حسن مر تضیٰ ،منصور کیانی ،احمد علی گچی ، محمد حفیظ ،وڈیرہ نذیر ،سمیت دیگر عہدیداران اور اراکین پر مشتمل وفد کے ساتھ ایم ڈی واٹربورڈ سے ایک ملاقات کے دوران کیا ،

اس موقع پر یونین کے عہدیداران اور اراکین نے اسد اللہ خان کو ایم ڈی واٹربورڈ تعینات ہونے پر مبارکباد دی پھولوں کے ہار پہنائے اور مٹھائی تقسیم کی گئی ،محسن رضا نے کہا کہ واٹربورڈ میں موجود خرابیوں کی سب سے بڑی وجہ پے درپے واٹربورڈ میں باہر سے افسران کی بطور ایم ڈی واٹربورڈ تقرری ہے ، باہرسے آنے والے ایم ڈی کو سال چھ مہینے صرف واٹربورڈ کے معاملات ،فراہمی ونکاسی آب کے نظام کو سمجھنے میں لگ جاتے ہیں ، جب تک ان کی سمجھ میں واٹربورڈ کا پیچیدہ نظام آتا ہے پانی سر سے گزرچکا ہوتا ہے ،

بعدازاں ان کا تبادلہ کردیا جاتا ہے اور پھر نئے افسر کو واٹربورڈ کا ایم ڈی مقرر کرکے ادارے پر مسلط کردیا جاتا ہے ،انہوںنے کہا کہ اسد اللہ خان کی تقرری شہر اور ادارے کیلئے نیک شگون ثابت ہوئی ہے ان کے آتے ہی سالہاسال بعد حب ڈیم میں پانی آیا اورپانی کی قلت سے متاثرہ شہریوں نے سکھ کا سانس لیا .

انہوں نے کہا کہ اسد اللہ خان ادارے کو ترقی کی راہ پر ڈال چکے ہیں،ادارے کے سینیئر افسر ہونے کی وجہ سے پورے نظام سے نہ صرف واقف ہیں بلکہ مسائل کے حل کی صلاحیت بھی رکھتے ہیں ، عرصہ سے ادارے کے ڈپٹی منیجنگ ڈائریکٹر رہنے کی وجہ سے وہ واٹربورڈ ملازمین کے مسائل سے بھی بخوبی آگاہ ہیں ،امید ہے کہ شہریوں کو پانی کی فراہمی، نکاسی آب کی سہولت کی دستیابی،ادارے کے استحکام کے ساتھ ساتھ واٹربو رڈ کے محنت کشوں کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کریں گے ،

اس موقع پر محسن رضا نے ،ایم ڈی واٹر بورڈ کی توجہ بر طرف ایڈ ہاک ملازمین کی بحالی ،وفات پانے والے ملازمین کی بیوہ یا ان کے بچے ،سن کو ٹے کے تحت ملازمین کے بچوں کو ملازمت کی فراہمی ، ڈی پی سی ٹو 2012 بحال کی بحالی ،بیلدار اور قلی کی سینٹر لائز سینارٹی ، چارٹر آف ڈیمانڈ کے بقایا جات کی عید سے قبل ادئیگی کی جانب مبذول کرائی ،

انہوں نے65 فیصد ہاﺅس رینٹ لاﺅنس کی بحالی ،جی فنڈ،گریجویٹی، کمو ٹیشن،فا نانشل اسسٹنٹ،ماہانہ بقایاجات خصوصاًگروپ انشو رنس کی رقم جو کہ انشورنس کمپنی سے آتی ہے، مر حوم ملازمین کے لو احقین کو بر وقت ادائیگی ،میڈیکل کی رقم ماہانہ کی بنیاد پر تنخواہ میں شامل کرنے اور اچھی شہرت کے حامل اسپتالوں کوواٹر بورڈ کے پینل پرلانے، ٹیکس کے سب انسپکٹر زکی کنفر میشن سمیت دیگر مسائل کے حل کا مطالبہ بھی کیا ،

اس موقع پر ایم ڈی واٹربورڈ اسداللہ خان نے وفد کا شکریہ ادا کیا اور انہیں مکمل تعاون کا یقین دلایا ، انہوں نے کہا کہ واٹربورڈ ملک کا اہم ادارہ ہے ، یہ ملک کے سب سے بڑے شہر اور معاشی حب کو فراہمی ونکاسی آب کی سہولیات فراہم کرتا ہے،انہوں نے کہا پیپلز لیبر یونین سمیت واٹربورڈ کی دیگر یونینز واٹربورڈ میں نظم و ضبط کے قیام ، ریکوری میں اضافہ اور شہریوں کی بہتر سے بہتر خدمت کیلئے انتظامیہ سے تعاون کریں ،

انہوں نے کہا کہ واٹربورڈ کے ملازمین سال کے 365دن 24گھنٹے کام کرتے ہیں ان کی خوشحالی ادارے کی خوشحالی اور استحکام ہے ، واٹربورڈ ملازمین کی فلاح کیلئے متعدد اقدامات کیئے جاچکے ہیں ،واٹربورڈ ملک کے چند اداروں میں شامل ہے جس کے ملازمین کو ہر ماہ باقاعدگی سے پہلی تاریخ کو ہی تنخواہ ملنی شروع ہوچکی ہے ،قواعد کے مطابق ملازمین کو حاصل تمام تر سہولیات فراہم کی جائیں گی ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *