نیند موت کی بہن کیوں…..؟؟؟؟

نیند موت کی بہن کیوں…..؟؟؟؟

تفسیر کے دوران استاذہ نے ایک بات کہی کہ آپ سونے سے پہلے lights بند کر کے خود کو قبر میں imagine کریں اور پھر اپنے اعمال پر ایک نظر دوڑائیں کہ کیا اس قابل ہیں؟؟؟ کہ اگر اس کے بعد آنکھ قبر میں کھلے تو حساب دے سکیں گے؟؟؟

میں نے رات کو خود کو قبر میں imagine کرنے کی کوشش کی لیکن کافی دن میں ناکام رہی. آج گزر ایک قبرستان سے ہوا تو آس پاس سے کسی کا ایک جملہ کانوں میں پڑا کہ کیسے کیسے بڑے لوگ یہاں سوئے ہوئے ہیں جو ناک پر مکھی بھی نہیں بیٹھنے دیتے تھے وہ بھی ہیں یہاں. سب کے سب برابر، ایک ہی مٹی میں. اور جب میں گھر سستانے کے لیے لیٹی تو مکمل خاموشی اور گھپ اندھیرا تھا. اور میرے دماغ میں استاذہ کے الفاظ اور قبرستان سب کچھ mix ہونے لگ گیا. اور ایک طرف سے کسی مچھر نے کاٹا اور دوسری طرف بھی جسم میں عجیب سا درد اٹھا کہ لیٹنا محال ہو گیا.

پھر مجھے سوچ آئی کہ قبر میں خود کو کیسے ڈالنا ہے.

محسوس کریں کہ آپ ایک کھردرے بستر پر ہیں.
آپ کی آنکھیں کھلی ہیں لیکن گھپ اندھیرا ایسا ہے کہ ہاتھ کو ہاتھ بھی سجھائی نہیں دے رہا ہے. آپ کو مسلسل گھٹن کا احساس ہو رہا ہے. اندھیرے اور تنگ جگہ کہ تصور سے ہی انسان کی جان جاتی ہے پھر وہ تو صرف دو گز زمین کا ٹکڑا ہو گا. تو کیا اندھیرے میں سانس لے سکیں گے آپ؟؟؟

آپ کو کوئی آواز نہیں آ رہی ہے. بالکل تنہائی، اکیلا پن.
جیسے رات کو سوتے ہوئے ہر انسان اکیلا سوتا ہے اسی طرح قبر میں بھی اکیلا سلا دیا جاتا ہے اور آنکھ کھلتی ہے تو آس پاس کسی کی آواز نہیں. تو آپ محسوس کریں کہ تھوڑی دیر اگر کسی جگہ پر خاموشی ہو تو آپ کتنی وحشت محسوس کرتے ہیں کیا قبر کی خاموشی کا سامنا کر پائیں گے؟؟؟ کیا اس وحشت میں جی پائیں گے؟؟؟

جیسے ابھی سوتے ہوئے مچھر کاٹتا ہے تو سونے نہیں ہوتا، لیٹنا بھی مشکل ہو جاتا ہے جگہ بدلتے ہیں مسلسل کہ کسی جگہ مچھر کم ہوں اور آپ نیند پوری کر لیں. اسی طرح کوئی بچھو، کوئی مچھر یا جان لیوا کیڑا آپ کے گوشت کو نوچنا شروع کر دے اور آپ مسلسل ہاتھ پاؤں چلا رہے ہیں اسے ہٹانے کی کوشش کر رہے ہیں لیکن وہ بڑھتے چلے جا رہے ہیں تو کیا کریں گے آپ؟؟؟؟؟

اپنی قبر آپ دنیا میں تیار کرتے ہیں. موت کے بعد تو صرف آپ اس میں لیٹنے کے لیے جاتے ہیں. اس لیے ہر روز یہ سب کچھ imagine کر لیں اور اپنے اعمال پر بھی نگاہ ڈال لیں. کہ کیسا بستر تیار کر رہے ہیں ایک لمبی نیند کے لیے؟؟؟ دنیا کے بستر کی بجائے اپنی موت کے بعد کے بستر پر نظر ڈال لیں…….!!!!

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *