جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے وفد کی اپوزیشن لیڈر سندھ خواجہ اظہار الحسن سے ملاقات

کراچی : ایسوسی ایٹ ڈگری پروگرام اور ایچ ای سی کی پالیسیوں کے خلاف جوائنٹ ایکشن کمیٹی  معاشرے کے تمام مکاتب فکر سے تیزی سے مشاورت کا عمل مکمل کر رہی ہے تاکہ اعلی تعلیم کے حوالے سے نیشنل کنونشن کے انعقاد کی تاریخ دی جا سکے۔

اس سلسلے میں آج جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے وفد نے رکن سندھ اسمبلی خواجہ اظہار الحسن سے ملاقات کی ۔ جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے وفد میں جامعہ کراچی کے پروفیسر ڈاکٹر ایس ایم طحہ ، پروفیسر ڈاکٹر ریاض احمد ، پروفیسر ڈاکٹر اسامہ شفیق ، پروفیسر ڈاکٹر انتخاب الفت ، سپلا ٹائم اسکیل کے پروفیسر ظفر یار خان  ، ممبر اکیڈمک کونسل پروفیسر نعیم خالد اور سوشل ایکٹوسٹ نغمہ اقتدار شامل تھیں۔

جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے وفد نے رکن سندھ اسمبلی خواجہ اظہار الحسن کو وفاقی HEC کی تعلیم دشمن پالیسیوں خاص کر ایسوسی ایٹ ڈگری پروگرام کے حوالےسے آگاہ کیا ۔ خواجہ اظہار الحسن نے اس پر نا صرف اپنی بھرپور حمایت کا یقین دلایا بلکہ اس جدوجہد کو اسمبلی کے فلور تک لے جانے کے عزم کا اظہار بھی کیا ۔

مزید پڑھیں :سندھ پولیس کا ہیڈ کانسٹیبل سید خرم حسین بخاری غائب

جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے وفد نے رکن سندھ اسمبلی خواجہ اظہار الحسن کو ڈوزئر بھی پیش کیا اور اس اہم مسئلے پر تعاون کرنے پر ان کا شکریہ ادا کیا ۔ جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے وفد نے خواجہ اظہار الحسن کو بتایا کہ وہ سندھ کی جامعات اور منسلک کالجز کے تمام اساتذہ اور معاشرے کے تمام طبقات کو اس جدوجہد میں بھر پور عملی کردار ادا کرنے کی دعوت دے رہا ہے اور معاشرے کی تمام اکائیوں سے امید کرتا ہے کہ وہ اس قومی مسئلہ پر آواز اٹھائیں ۔ تا کہ اعلیٰ تعلیم، جامعات اور کالجز کے مستقبل کو بچایا جا سکے ۔

جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے اراکین میں  پروفیسر ڈاکٹر ایس ایم طحہ ، پروفیسر ڈاکٹر ریاض احمد ، پروفیسر ڈاکٹر اسامہ شفیق ، پروفیسر ڈاکٹر انتخاب الفت (جامعہ کراچی) اور  پروفیسر ظفر یار خان ( سپلا ٹائم اسکیل) کے علاوہ  پروفیسر نعیم خالد (ممبر اکیڈمک کونسل ) شامل ہیں ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *