لانگ مارچ کا مطلب مارچ کیلئے ”مہنگا بجٹ“ مہیا کرانا ہے : حافظ حسین احمد

کوئٹہ : لانگ مارچ“ کو ”مہنگائی مارچ“ کا نام دینا حقیقت پسندانہ ہے کیوں کہ مارچ کے لیے”مہنگا بجٹ“ بنایا گیا ہے : حافظ حسین احمد

پی ڈی ایم کے ”سرخیل“ نے لندن کے ”پناہ گزین“ کو مارچ اخراجات کے نام پر 5 ارب روپے کی فراہمی کا مطالبہ کر دیا ہے ، لندن کا بھگوڑا ”پیسہ پھینک تماشہ دیکھ“ کا بین الاقوامی چیمپئن ہے اور اسی فارمولے کے تحت ہی”رینٹل احتجاج“ کی طویل سیریز کھیلی جا رہی ہے ۔

پنڈی کی جانب مارچ کا اعلان ”لیڈر بھبکی“ ثابت ہو چکا ہے، ویسے بھی بھلا اپنوں کے ”ہیڈ کوارٹر“ پر احتجاج اور دھرنا کوئی کیسے دے سکتا ہے فارن فنڈنگ“ کیس اور نیب نوٹس کے بعد (ہن، ہن خبر آئی ہے باجوہ ساڈا بھائی ہے ) والی کیفیت طاری ہو گئی ہے ۔

مذید پڑھیں :یہ فتویٰ آپ کے لئے مفید ہو گا

جمعیت علماء اسلام پاکستان کے سینئر رہنما اور سابق پارلیمنٹرین حافظ حسین احمد نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم کا حکومت گرانے کے لیے مجوزہ ”لانگ مارچ“ کو”مہنگائی مارچ“ کا نام دینا اس لیے حقیقت پسندانہ ہے کیونکہ اس مارچ کے لیے انتہائی ”مہنگا بجٹ“ بنا لیا گیا ہے اور ان کے ”سرخیل“ نے لندن کے”پناہ گزین“کو مارچ اخراجات کے نام پر صرف 5 ارب روپے ( سکہ رائج الوقت) کی فراہمی کا بھی مطالبہ کر دیا ہے ۔

وہ جمعہ کو اپنی رہائش گاہ جامعہ مطلع العلوم میں صوبہ کے مختلف اضلاع سے آئے وفود اور میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ لندن کے بھگوڑے جو کہ ”پیسہ پھینک تماشہ دیکھ“ کے بھی بین الاقوامی چیمپئن ہیں اور اسی فارمولے کے تحت ہی ”رینٹل احتجاج“ کی طویل سیریز کھیلی جا رہی ہے ۔

مذید پڑھیں :کراچی کی 164 کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹیوں میں غبن کی تحقیقات

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم کی قیادت کا پنڈی کی جانب مارچ کے اعلان کے وقت بھی میں نے اسے ”لیڈر بھبکی“ قرار دیا تھا کیونکہ بھلا اپنوں کے ”ہیڈ کوارٹر“ پر بھی ”احتجاج اور دھرنا“ کیسے دے سکتا ہے ۔ ویسے ”فارن فنڈنگ“کیس اور نیب نوٹس کے بعد تو پنجابی زبان کے اس مقولہ کہ (ہن، ہن خبر آئی ہے باجوہ ساڈا بھائی ہے) والی کیفیت طاری ہو گئی ہے۔

ایک اور سوال کے جواب میں حافظ حسین احمد نے کہا کہ 5 ارب روپے کی فراہمی کے لیے لندن کی گئی ٹیلی فونک کال کے ہرطرف چرچے ہی چرچے ہیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *