محکمہ ورکس دادو کا ایکسین کھرب پتی افسر نکلا

رپورٹ : زاہد کھوکھر

کراچی : محمکہ ورکس اینڈ سروسز دادو کے ایکسین پر کرپشن کے ذریعے اربوں روپے کی جائیداد بنانے کا الزام سامنے آیا ہے ۔ محکمہ اینٹی کرپشن نے اعلیٰ سطحی تحقیقات شروع کر دی ہیں ۔

ورکس اینڈ سروسز کہ محکمہ ہائی وے کے اے ای این / ایس ڈے او مولا بخش مستوئی پر سندھ کے مختلف شہروں میں جائیدادیں بنانے کے الزام کے تحت تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں ۔ اینٹی کرپشن کے تحقیقاتی افسر نے ایکسین ہائے وے دادو کو خط لکھ دیا ہے ۔ تمام شواہد اور کاغذات فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے ۔

مزید پڑھیں :محکمہ ریونیو کے 28 رجسٹرار ماہانہ 11 کروڑ بھتہ جمع کرتے ہیں : رپورٹ

مولا بخش مستوئی پر مزدور آباد دادو میں 8 کروڑ روپے کی جائیداد، شاہجہان پارک کے قریب 5 کروڑ روپے کے پلاٹس ، نجم کالونی دادو میں 350 سے زائد بھینسوں کا باڑا ، شورو گوٹھ حیدرآباد میں 400 گز کہ 5 پلاٹس ، بحریہ ٹاون کراچی میں کمشرل گلی میں 300 گز کا پلاٹ، عبداللہ اسپورٹس ٹاور حیدرآباد کے قریب میں روڈ کے ساتھ 40 ایکڑ کا رقبہ حاصل کرنے کا الزام ہے  ۔

مولا بخش مستوئی حیدرآباد کراچی اور دادو میں مختلف تجارتوں میں شیئر ہولڈر ہیں ، نئے ماڈل کی مختلف گاڑیوں کے مالک بھی ہیں ۔محکمہ اینٹی کرپش کے تحقیقاتی افسر نے مولا بخش مستوئی اور اس کے اہل خانہ کی جائیدادوں کی تفصیلات کے لیئے ایف بی آر کو بھی خط لکھ دیا ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *