کرپشن کم ہونے کے بجائے بڑھ جانا ہی تبدیلی ہے کیا ؟ : محمد ثروت اعجاز قادری

ثروت اعجاز قادری

کراچی : سربراہ پاکستان سنی تحریک محمد ثروت اعجاز قادری نے کہا ہے کہ کرپشن کم ہونے کی بجائے بڑھ جانا کیا یہ تبدیلی ہے ۔

حکمران خود احتسابی عمل پر کام کریں، ٹرانسپیرنسی انٹر نیشنل کی رپورٹ سے اب سب کی آنکھیں کھل جانی چاہیے، کرپٹ عناصر کے خلاف بلا تفریق کاروائی کر کے لوٹی گئی ملکی دولت وصول کر کے سزا کا تعین کیا جائے، غربت بڑھ رہی ہے مہنگائی تھمنے کو تیار نہیں اور حکمران دعوؤں سے کام چلا رہے ہیں، حکمرانوں نے عوام سے کئے گئے وعدے وفا نہ کئے اور ان کے توقعات پر نہ اُترے تو پھر عوامی محاسبہ سے کوئی نہیں بچ سکے گا، ملکی نظام کو بہتر بنانے کیلئے حکومت نے اپنی آدھی سے زائد مدت مکمل کر لی ہے ۔

عوام حکومت سے تبدیلی کیلئے اچھی امیدیں لگائے ہوئے ہیں ٹھیس پہنچی تو عوامی اعتماد ختم ہو جائے گا، کرپٹ عناصر کسی بھی صف میں ہوں قانون کو حرکت میں لایا جائے،ٹرانسپیرنسی رپورٹ سے حکومتی شفافیت کے دعوؤں کو دھچکا اور مہنگائی کو بلندیوں پر پہنچا دیا ہے ۔

مزید پڑھیں :جے یو آئی ضلع غربی 5 فروری کو چاندی چوک بلدیہ ٹاؤن سے یکجہتی کشمیر ریلی نکالے گی۔ ڈاکٹر نصیر سواتی

ان خیالات کا اظہار انہوں نے ٹرانسپیرنسی رپورٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے کیا،ثروت اعجاز قادری کا کہنا تھا کہ سیاسی طور پر ایک دوسرے کو نیچا دیکھانے کی بجائے بلاتفریق احتساب ہونا چاہیے،کرپشن کے دروازے کو ہمیشہ کیلئے بند کرنے کیلئے سخت اقدامات اور سزاؤں کا تعین کرنا ہو گا ۔

پڑوس ممالک میں کرپشن کی سزا موت رکھی گئی ہے اسی وجہ سے وہاں کرپشن بہت کم ہوتی ہے،انہوں کا کہنا تھا کہ کرپٹ عناصر ملک وقوم کے مجرم ہیں انہیں کی وجہ سے مہنگائی اور بے روزگاری میں اضافہ ہوا ہے، وزیر اعظم عمران خان کرپشن کے خلاف سخت قانون سازی کیلئے بل پیش کریں، کرپشن کا راستہ بند کرنے کیلئے عوام ان کے ساتھ کھڑے ہونگے ۔

بیرونی مداخلت کو مسترد کر کے معاشی پالیسیاں بنائی جائیں تو معیشت میں استحکام آئے گا، استحصالی قوتیں ملک کو معاشی طور پر جکڑے رکھنا چاہتی ہیں ان کے سازشی منصوبوں کو حکومت اپنی میڈان پاکستان پالیسیوں سے زمین بوس کر دے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *