ٹوکیو میں جعل سازی پر صحافی عرفان صدیقی پر پاکستان میں مقدمہ درج

الرٹ ویب ڈیسک : صحافت کی آڑ میں پاکستان کے سب سے بڑے اخبار اور چینل سے منسلک پاکستانی صحافی عرفان صدیقی کا جاپان سے جعلسازی کر کے پاکستان میں گاڑیوں کی امپورٹ پر قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان اور قومی عزت وقار کو عالمی سطح داغدار کرنے پر کسٹمز کراچی میں مقدمات کی اندراج کے بعد تحقیقات کا آغاز ہو گیا ہے  ۔

صحافت کی آڑ میں پاکستان کے سب سے بڑے اخبار اور چینل سے منسلک پاکستانی عرفان صدیقی نامی صحافی کا جاپان سے جعلسازی کر کے پاکستان میں گاڑیوں کی امپورٹ پر قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان اور قومی عزت وقار کو عالمی سطح داغدار کرنے پر کسٹمز کراچی میں مقدمات کی اندراج کے بعد تحقیقات کا آغاز ہو گیا ۔ جاپان اور پاکستان میں امپورٹڈ گاڑیوں کے کاروبار سے منسلک تاجروں میں گاڑیاں پورٹ رکنے پر تشویش پھیل گئی ۔ جاپان میں پاکستان سفارت کی جعلی مہراور ٹریڈ اینڈ انویسٹمنٹ قونصلر طاہر حبیب چیمہ کے جعلی دستخط کر کے پاکستان گاڑیاں امپورٹ کرنے پر پاکستان میں پاکستانی صحافی عرفان صدیقی کیخلاف مقدمات کا اندراج اور تحقیقات کا آغاز ہو گیا ہے ۔

دوسری جانب جاپان میں پاکستانی سفیر نے ملکی بدنامی کی وجہ مقدمہ نہ کرانے کا فیصلہ کیا تھا مگر جاپان میں موجود پاکستانی کمیونٹی کے دباؤ کے بعد ایمبیسی نے صحافی عرفان صدیقی کیخلاف جعلسازی اور فراڈ مقدمہ درج کرانے کا فیصلہ کیا ہے ۔ مقدمہ جو وزارت خارجہ کی احکامات کے بعد درج کرایا جائیگا ۔

مذید پڑھیں :فلاحی ریاست بنانے کیلئے 1 ہزار پاکستانی P.hD سکالرز کی مہم شروع

ذرائع نے انکشاف کیا ہے کی عرفان صدیقی کے پاکستان میں موجودہ حکومت اور اسٹیبلشمنٹ سے قریبی تعلقات ہیں ۔ وہ سال میں 10 سے زائد بار پاکستان کے دورے کرتے تھے اور جاپان جانے والے سرکاری وفود کا بھی خصوصی طور پر حصہ ہوتے تھے ۔ ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ صحافی کا بچاؤ کیلئے پاکستان میں حکمران جماعت اور اسٹیبلشمنٹ سے رابطوں کا آغاز کر دیا ہے ۔ قبل ازیں غیر جانب دار زرائع کے مطابق جاپان میں رہنے والے نجی ٹی وی کے نمائندے کا جاپان کی تاریخ کا بڑا فراڈ ایف آئی آر درج ہو گئی ۔ جس کے مطابق مذکورہ صحافی نے پاکستان گاڑیاں بھیجنے کیلئے پاکستانی سفارت خانہ کی جعلی اسٹمپ جعلی سائن اور دیگر چیزوں کا استعمال کیا ہے ۔

جس جاپان میں پاکستان کی ساکھ کو شدید نقصان پہنچا ہے جب کہ جاپان میں پاکستانی کمیونٹی کیلئے مشکلات میں اضافے کے ساتھ جاپان سے پاکستان میں گاڑیوں کا کام کرنے والوں کو آئندہ شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا ۔ زرائع کے مطابق جعلسازی کیلئے جو کاغذات استعمال کیے گئے ہیں ۔ ان میں ایک سرٹیفیکٹ ہے ۔ جو عرفان صدیقی کی کمپنی ہے جس کا جاپانی زبان میں نام بھی لکھا ہے ۔

عرفان کی کمپنی کا نام فیوجی آٹو ٹریڈنگ جس کے تحت یہ گاڑیاں پاکستان بھیجی جاتی تھیں ۔ مذکورہ سرٹیفکیٹ پر سبز رنگ کی مہر لگی ہے ۔ یہ جعلی ہے اور عرفان صدیقی نے یہ بنوا رکھی تھی ۔ اس طرح نہ جانے کب سے یہ بغیر ڈیوٹی یہ گاڑیاں پاکستان بھیج کر حکومت کو کروڑوں روپے کا چونا لگاتا رہا ہے ۔

مذید پڑھیں :کالجز کے اساتذہ کو مبینہ جعلی صحافی ہراساں کرنے لگے

ٹوکیو میں پاکستانی سفارتخانہ بڑے اخبار اور اس کے ٹی وی چینل کی وجہ سے اس سے ڈرتے ہیں ۔ لیکن کمرشیل قونصلر طاہر حبیب چیمہ جس کی اس نے جعلی مہر بنوا رکھی ہے ۔ سخت مشتعل ہے اور وہ ٹوکیو میں پولیس کو اطلاع دینے جا رہے تھے لیکن سفیر نے اسے روکا ہوا ہے ۔

ذرائع کے مطابق مذکورہ صحافی عرفان صدیقی کی صحافت کی آڑ جعلسازی اور فراڈ کی یہ حرکت کے سامنے آنے کے بعد جاپان میں گاڑیوں کا کاروبار کرنے والے تمام پاکستانی مشکوک ہو گئے ہیں اور ان کی پاکستان کے لئے گاڑیوں کی شپمنٹ رک گئی ہے ۔ جس سے پاکستانی کمیونٹی سخت پریشانی کا شکار ہو گئی ہے ۔ جب کہ دوسری جانب پاکستان کسٹم نے عرفان صدیقی کی کمپنی کے خلاف ایف آئی آر درج کر کے تحقیقات شروع کر دی ہیں ۔ اب اس کے پرانے گھپلے بھی سامنے آئیں گئے کہ کس طرح اس نے سپر ہائی وے انڈسٹریل ایریا میں گلشن معمار کے قریب آئی ٹی پارک کی تعمیر کے لئے جاپانی انویسمنٹ کے نام پہ دس ایکٹر صنعتی پلاٹ مارکیٹ سے صرف دس فیصد قیمت میں لے کر چھتیس کروڑ میں بیچ دیا تھا۔

ذرائع کے مطابق جاپان میں حالیہ فراڈ کے بعد پاکستانی ایمبسی میں ہل چل مچ گئی معلومات کرنے پر پتہ چلا کہ عرفان صدیقی نامی پاکستانی صحافی نے کمرشل اٹاچی کی مہر بنا کر جعلی پیپروں پر پچاس لینڈ کروزر اور پراڈو کلیر کرائیں جاپان میں پاکستانی ایمبسی کے کمرشل اٹاچی طاہر چیمہ نے فوراً ایکشن لیا اور کراچی کسٹم میں انکوائری شروع ہوئی ۔ جس پر کسٹم حکام کے حوش اڑھ گئے جب کہ کراچی میں موجود بہت سے کلیئر نگ ایجنٹوں نے بھی کافی گاڑیاں جعلی پیپر بنا کر گاڈیا کلیئر کروائی گئی ہیں ۔ زرائع کے مطابق جاپان میں تاریخ کے سب سے بڑے فراڈ کے بعد کسٹم حکام نے انکوائری کے دوران تمام گاڑیوں کی کلیئرنگ روک دی گئی ہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *