کراچی انٹر بورڈ میں من پسند ناظمِ امتحانات لانے کیلئے چیئرمین سرگرم

کراچی : انٹر بورڈ کے چیئرمین ڈاکٹر سعید الدین نے من پسند افسر کو ناظم امتحانات تعینات کرنے کی تیاری کر لی ، نعمان احسن میٹرک بورڈ میں تعیناتی کے دوران نتائج میں خرد برد اور کروڑوں روپے کما چکا ہے ۔

انٹر بورڈ کے قائم مقام ناظم امتحانات شجاعت ہاشمی کو ہٹا کر اس کی جگہ میٹرک بورڈ کے ایک سابق کنٹرولر اور جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی کراچی میں ایڈمشن کے انچارج نعمان احسن کو لانے کی تیاریاں تیز کر لی گئی ہے  ۔ نعمان احسن سابق گورنر کی وجہ سے میٹرک بورڈ میں سیاہ و سفید کے مالک رہے ہیں ۔ جن کی جاننے والی ایک خاتون اب بھی بورڈ میں موجود ہیں ۔

انٹر بورڈ کراچی میں من پسند ناظم امتحانات لانے کے لئے بورڈ میں حال ہی میں تعینات ہونے والے چیئرمین ڈاکٹر سعید الدین سرگرم ہو گئے ہیں ۔ جب کہ اس معاملے میں صوبائی حکومت کے ذیلی ادارے محکمہ یونیورسٹیز اینڈ بورڈز کے ایک ایڈیشنل سیکریٹری بھی اپنا کردار ادا کر رہے ہیں ۔

با وثوق ذرائع کا کہنا ہے محکمہ یونیورسٹیز اینڈ بورڈز میں نعمان احسن کا صرف سی وی موجود ہے ۔ جس کے بعد محکمہ یونیورسٹیز اینڈ بورڈ نے ان کی بحیثیت ناظم امتحانات عارضی تقرری کے لئے نوٹ شیٹ تیار کی ہے ۔ اس نوٹ شیٹ میں سفارش کی گئی ہے کہ نعمان احسن کو جب تک بورڈ میں ریگولر ناظم امتحانات تعینات نہیں ہو جاتا اس وقت تک انہیں بورڈ کا ناظم امتحانات مقرر کیا جائے ۔

مذید پڑھیں :واٹس ایپ بمقابلہ ٹیلی گرام

ذرائع کا کہنا ہے کہ نعمان احسن کو اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی میں عارضی ناظم امتحانات تعینات کرانے کے حوالے سے اعلٰیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کے چیئرمین پروفیسر ڈاکٹر سعید الدین کی جانب سے ابھی تک کوئی تحریری سفارش نہیں کی گئی ۔تاہم باوثوق ذرائع کا کہنا ہے کہ انہوں نے نعمان احسن کی اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی میں بحیثیت ناظم امتحانات تقرری کی تحریری سفارش بھیجنے کی یقین دہانی کرا دی ہے ۔

واضح رہے کہ اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کے سابق چیئرمین پروفیسر انعام احمد نے اپنے دور میں بورڈ کے امتحانی نتائج کو شفاف بنانے کے لئے سخت اقدامات کئے ، جس کی وجہ سے اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی میں بتائج میں رد و بدل کے واقعات میں بڑی حد تک کمی آئی تھی ۔ اس حوالے سے انہوں نے اپنے دور میں متعدد ناظم امتحانات کو شکایت پر تبدیل بھی کیا تھا ۔

بورڈ ذرائع نے بتایا کہ محکمہ یونیورسٹیز اینڈ بورڈ کے ایک افسر نے بورڈ کے موجودہ ناظم امتحانات شجاعت ہاشمی پر نتائج میں رد و بدل کے لئے دباﺅ ڈالا تھا مگر انہوں نے دباﺅ کو مسترد کر دیا تھا ۔ یہی وجہ ہے کہ ایک ایماندار ناظم امتحانات کو ہٹانے کے لئے محکمہ یونیورسٹیز اینڈ بورڈز کا ایک ایڈیشنل سیکریٹری بھی متحرک ہے ۔

مذید پڑھیں :مہنگائی میں اضافہ حکومتی ناکامی ہے،رخسار بٹ

ذرائع کے مطابق اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کے موجودہ چیئرمین پروفیسر ڈاکٹر سعید الدین جو اس سے قبل ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کے چیئرمین رہے ہیں اور ان پر نتائج میں رد و بدل کے سنگین الزامات پر محکمہ یونیورسٹیز اینڈ بورڈز نے انکوائری کرائیتھی مگر نا معلوم وجوہ کی بنا پر انکوائری افسر کو سال 2018 ءسائنس گروپ کے نتائج کی تحقیقات کے بجائے سال 2017 اور سال 2019 ء کے نتائج کی تحقیقات کرا کے انہیں کلین چٹ دے دی گئی تھی ۔

واضح رہے کہ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی میں سال 2018 کے میٹرک سائنس گروپ کے سالانہ امتحانات کے نتائج میں بڑے پیمانے پر رد و بدل کی شکایات سامنے آئی تھیں ۔ اس حوالے سے بورڈ کے ملازم کی تحریری شکایت پر محکمہ یونیورسٹیز اینڈ بورڈز نے تحقیقات کرائی تھیں مگر انکوائری افسر کو سال 2018 کے نتائج کی تحقیقات سے روک دیا گیا تھا ۔ پروفیسر ڈاکٹر سعید الدین پر یہ بھی الزام رہا ہے کہ انہوں نے خلاف ضابطہ اپنے ایک قریبی عزیز کو ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کے شعبہ امتحانات کی انچارج آئی ٹی کی ایک اہم پوسٹ تعینات کیا تھا ۔

واضح رہے کہ پروفیسر ڈاکٹر سعید الدین کی اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی میں بطور چیئرمین بورڈ تعیناتیکا معاملہچیف سیکریٹری سندھ نے ان کے کردار کی ملک کی چار ایجنسیوں سے مثبت تصدیقی رپورٹ سے مشروط کیا تھا مگر انہیں ملک کی ایک اہم ترین ایجنسی کی رپورٹ کے بغیر ہی 16 دسمبر 2020 کو چیئرمین بورڈ تعینات کر دیا گیا تھا۔اب انہوں نے اپنی تعیناتی کے بعد اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کے ایماندار ناظم امتحانات کو ہٹا کر اپنا من پسند ناظم امتحانات لانے کے لئے سرگرمیاں تیز کر دی ہیں۔

مذید پڑھیں :وقار ذکا نے ٹیکنالوجی موومنٹ پاکستان سے سیاست کا اعلان کر دیا

واضح رہے کہ نعمان احسن کو ڈاکٹر سعید الدین کا یقین دہانی کرائی ہے کہ ان کی تعیناتی کے بعد وہ ایجوکیشن رپورٹنگ کے حوالے سے میڈیا کو کنٹرول کرنے کا فن جانتے ہیں اور اس کے بعد ان کو کوئی فکر نہیں ہو گی ۔ جس کی وجہ سے سعید الدین خان نے اپنی میٹرک بورڈ میں بنائے جانے والے اثاثوں کی بقا اور نئے اثاثے بنانے کی مہم کے پیش نظر بورڈ میں نعمان احسن کو لانے کی تیاری کی ہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *