چکور پاکستان کے علاوہ عراق کا بھی قومی پرندہ ہے ‛ دلچسپ رپورٹ

عزت اللہ خان

چکور
پاکستان اور عراق کے اس قومی پرندے کا نام سنسکرت زبان سے لیا گیا ہے، یہ ترکی سے لے کر افغانستان ، ہندوستان سے لے کر مغربی ہمالیہ کے پہاڑی سلسلوں تک اور وہاں سے نیپال تک پائے جاتے ہیں۔

چکور کا مسکن اونچی پہاڑیاں اور ان پر پھیلی ہوئی جھاڑیاں اور گھاس ہیں۔ بہت سے علاقوں میں یہ سطح سمندر سے 3000 سے 4000 میٹر کی بلندی پر پایا جاتا ہے۔لیکن یہ 600 میٹر کی بلندی پر بھی پایا جاتا ہے۔

نر چکور اور مادہ چکور تقریباً ایک جیسے ہی ہوتے ہیں۔ مادہ چکور سائز میں تھوڑی چھوٹی ہوتی ہے۔ چکور عام طور پر چھوٹے چھوٹے گروہوں کی شکل میں رہتے ہیں۔ ایک گروہ میں ان کی تعداد 10 سے لے کر 50 تک ہوسکتی ہے۔

چکور اپنا گھونسلہ چھوٹی جھاڑیوں یا آگے جھکی ہوئی چوٹیوں کے نیچے بناتے ہیں۔ خوراک کے طور پر کئی اقسام کے بیج اور کیڑے کھاتے ہیں۔ یہ گروہوں کی شکل میں بھی آرام کرتے ہیں جس میں یہ ایک دائرے کی شکل میں بیٹھتے ہیں جبکہ ان کا سر باہر کی طرف ہوتا ہے تاکہ کوئی شکاری ان پر حملہ نہ کردے۔

سنہری عقاب عموماً چکور کا شکار کرتا ہے اور یہ سردیوں کے موسم میں نیچے وادی میں اُتر آتے ہیں اور کھیتوں سے خوراک حاصل کرتے ہیں۔ یہ مسلسل آوازیں نکالتے ہیں خاص طور پر صبح اور شام کے اوقات میں ۔

چکور سرخاب کی نسل کا ایک پرندہ سمجھا جاتا ہے ۔ یہ خوبصورت پرندہ عموماً 32 سے 35 سینٹی میٹر طویل ہوتا ہے۔ تاہم افغانستان اور کوئٹہ کا چکور دراز قد ہوتا ہے ۔اس کی ٹانگیں اور چونچ سرخ ہوتی ہیں۔ اس کےگلا سفید ہوتا ہے جو ایک کالے دائرے میں گھرا ہوتا ہے۔ اس کے پروں پر سفید اور سیاہ دھاریاں ہوتی ہیں۔اسکی پشت ہلکی بھوری رنگت کی ہوتی ہے۔

یہ پرندہ ایشیا میں لبنان، پاکستان، افغانستان، ترکی، ایران اور بھارت میں عام پایا جاتا ہے۔اس پرندے کو امریکہ اور یورپ کے ممالک میں بھی کامیابی سے بسایا گیا ہے۔ یہ پرندہ پاکستان اور عراق کا قومی پرندہ ہے۔

چکور کے بارے بے شمار کہانیاں معروف ہیں ۔پاک و بھارتی کلچر میں چکور کو پیار کی علامات بھی سمجھا جاتا ہے- کئی ایسی باتیں بھی مشہور ہیں کہ چکور کا چاند کے ساتھ پیار ہے اور یہ چاند کو ٹکٹکی باندھ کر دیکھتا ہے- کہتے ہیں کہ یہ پرندہ، چاند سے بہت محبت کرتا ہے، اور اڑ کر چاند کو دبوچنا یا حاصل کرنا چاہتا ہے۔ مگر ہمیشہ ناکام ہی رہتا ہے۔ اور یہ آگ کی چنگاریاں بھی چاند کی کرنیں سمجھ کر کھا جاتا ہے ۔

چکور کو زیادہ تر لوگ گھر میں شوق سے رکھتے ہیں اور یہ جلد مانوس بھی ہو جاتا ہے جس کے بعد یہ باقاعدہ اسی گھر میں آزادانہ بھی رہ لیتا ہے ۔تاہم اس کے لیئے محنت کی ضرورت ہوتی ہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *