غیر منتخب عبدالحفیظ شیخ کو وفاقی وزیر بنا دیا گیا

حفیظ شیخ نے بطور وزیر حلف اٹھالیا

اسلام آباد : پاکستانی عوام کے ووٹوں کی چوری کا بڑا ثبوت دیتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان کی کابینہ میں ایک غیر منتخب شخص کو وزیر بنا دیا گیا ۔

ایوان صدر میں ڈاکٹر حفیظ شیخ کی بطور وفاقی وزیر حلف برداری کی تقریب ہوئی ، جس میں صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے حفیظ شیخ سے حلف لیا ۔

مقامی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ کی جانب سے وزیراعظم کے مشیروں کی کابینہ کمیٹیوں میں شمولیت سے متعلق فیصلے کے بعد پیدا ہونے والے آئینی بحران سے متعلق وزیراعظم عمران خان نے قانونی ٹیم سے مشاورت کی ۔

مذید پڑھیں :جدید ترین بارڈر سسٹم لا کر منی لانڈرنگ ختم کروں گا : وزیر داخلہ

ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے دو مشیروں اور ایک معاون خصوصی کو وفاقی وزیر بنانے کی تجویز پر غور شروع کردیا تھا اور مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کے بعد مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد اور معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان کو بھی 6 ماہ کے لیے وفاقی وزیر بنایا جاسکتا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ کے فیصلے کے بعد کسی آئینی بحران سے بچنے کیلیے وزیراعظم عمران خان نے آئین کے آرٹیکل 91 کی شق 6 کے تحت خصوصی اختیار کا استعمال کرنے پر غور شروع کردیا ہے، وزیراعظم آئین کے آرٹیکل 91 کے تحت کسی غیر منتخب شخص کو 6 ماہ کے لیے وفاقی وزیر مقرر کرسکتے ہیں۔

عبدالحفیظ شیخ، عبدالرزاق داؤد اور ڈاکٹر فیصل سلطان کو مارچ 2021 میں سینیٹر بنائے جانے کا امکان ہے، سینیٹر منتخب ہونے کے بعد تینوں مشیر وفاقی وزیر بن سکتے ہیں ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *