واٹر بورڈ کے سابق ڈائریکٹر بلنگ حمید پٹھان نے 4 منزلہ عمارت کو غیر قانونی کنکشن پر بلنگ جاری کرکے کروڑوں کا دھندہ کیا ہے .

رپورٹ : اختر شیخ

واٹر بورڈ کے سابق ڈائریکٹر بلنگ حمید پٹھان نے ضلع ایسٹ میں 4 منزلہ عمارت کو غیر قانونی کنکشن پر بلنگ جاری کردی ‛ بلنگ سے ادارے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچایا گیا ہے ۔

واٹر بورڈ کے سابق ڈائریکٹر بلنگ حمید پٹھان نے ضلع ایسٹ میں 4منزلہ عمارت کو غیر قانونی کنکشن پر بلنگ جاری کردی ۔گراؤنڈ پلس عمارت کے 31 فلیٹس کو پانی کے کنکشن اور سیوریج چارجز کی مد میں کروڑوں روپے کا نقصان دے دیا ۔ اینٹی کرپشن نے سابق ڈائریکٹر بلنگ کے خلاف پہلے ہی ڈیڑھ کروڑ روپے کی غیر قانونی کرپشن کی تحقیقات جاری رکھی ہوئی ہیں ۔

ضلع ایسٹ میں محمد شبیر کرار نامی شخص کی جانب سے واٹر بورڈ کے ڈپٹی ڈائریکٹر گارڈن ایسٹ کو درخواست دی گئی تھی جس میں پلاٹ نمبر 425گراؤنڈ پلس تھری 31 فلیٹ پر مشتمل عمارت کو بلنگ جاری کرنے کی استدعا کی گئی تھی واٹر بورڈ رولز کے مطابق کوئی بھی کمرشل عمارت تعمیر ہونے کے بعد واٹر بورڈ سے کنکشن لیا جاتا ہے ۔جس کے بعد مزکورہ عمارت میں تمام فلیٹ مکینوں کو مالکان فلیٹس حوالے کرنے کے بعد اس کی انفرادی بلنگ کی جاتی ہے ۔

تاہم بیسٹ ہوم ریسنڈنسی کے مالک نے واٹر بورڈ گارڈن ایسٹ کے ڈپٹی ڈائریکٹر اور واٹر بورڈ کے سابق ڈائریکٹر بلنگ حمید پٹھان سے ملی بھگت کر کے بغیر کنکشن سینکشن کرائے برائے راست بلنگ کرالی تھی ۔یہ امرقابل ذکر ہے کہ گراؤنڈ پلس 3 عمارت کو واٹر بورڈ رولز کے مطابق عمارت کے پلاٹ ۔علاقے کی قریبی سپلائی لائن اور سیوریج کو مدنظر رکھتے ہوئے کنکشن کا چالان جاری کیا جاتا ہے ۔ مذکورہ عمارت کا چالان کروڑو ں روپے میں بنتا تھا ۔

ادھر عمارت کو براہ راست بلنگ کرنے سے واٹر بورڈ کو لاکھوں روپے کی رشوت دے کر کروڑوں کا نقصان پہنچایا گیا ۔اس حوالے سے واٹر بورڈ کے سابق ڈائریکٹر بلنگ حمید پٹھان سے موقف جانے کے لیے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ میرا معاملہ اینٹی کرپشن میں ہے ۔معلوم رہے کہ سابق ڈائریکٹر بلنگ حمید پٹھا ن کے خلاف اینٹی کرپشن نے الغفور اسکائی ٹاور FL.11سیکٹر 11.Aنارتھ کراچی کو جاری کردہ براہ راست بلنگ کی مد میں ادارہ کو پہنچائے گئے 2کروڑ کی نقصان کی انکوائری جاری ہے ۔ معلوم رہے کہ اس حمید پٹھان اس وقت واٹر بورڈ‌میں واپس ڈپٹی ڈائریکٹر بنائے گئے ہیں جو انڈسٹریل ایریا کے انچارج ہیں .

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *