کورونا کا شکار KMC افسر احتجاجاً ڈائریکٹر کے گلے لگ گیا

کے ایم سی پپی

کراچی : کراچی میونسپل کارپوریشن ( کے ایم سی ) افسر شہزاد نے تنخواہ روکنے پر بلدیہ عظمی کراچی کے گریڈ 19 کے سینیر ڈائریکٹر ایچ آر ایم کو گلے لگا لیا اور ان کے گال پر بوسہ بھی دے دیا ۔

شہزاد انور نے جمیل فاروقی کو ملنے کے بعد اپنے کورونا میں ہونے کا انکشاف کیا ، افسر کے انکشاف پر ہیڈ آفیس میں کھلبلی مچ گئی ، افسران سیٹیں چھوڑ کر بھاگ گئے ۔ کے ایم سی کے کورونا سے متاثرہ افسر نے تنخواہ روکنے پر ڈاریکٹر ایچ آر ایم جمیل فاروقی کو گلے لگا لیا اور گال پر بوسہ دیا ۔ کورونا مریض نے ایڈمنسٹریٹر سیکٹریٹ میں جا کر بھی افسران سے ملاقات کی ۔

مذید پڑھیں : سوات کے عبدالرزاق کی کامیابی کا راز کیا ہے ؟

سینئر ڈائریکٹر ایچ آر ایم جمیل فاروقی کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ شہزار انور اسسٹنٹ ڈائریکٹر لینڈ لانڈھی تعینات تھے، انہیں 5 اکتوبر کو کرپشن کی شکایت پر معطل کیا گیا تھا، اور ایچ آر ایم کو رپورٹ نہ کرنے پر ان کی تنخواہ روک لی گئی تھی۔

جمیل فاروقی کا کہنا ہے کہ شہزار انور نے بہانے سے دفتر میں گھس کر میرے قریب آنے کی کوشش کی گئی، شہزاد انور کے خلاف قانونی کارروائی کروں گا۔ ان کا کہنا تھا کہ کورونا کا دوبارہ ٹیسٹ کرواؤں گا، مجھے چار ماہ قبل بھی کورونا مثبت آیا تھا ۔

تاہم یہاں یہ امر دلچسپ ہو گیا ہے کہ مذکورہ افسر کے خلاف ایس او پی کی واضح خلاف ورزری پر کیا ایکشن لیا جاتا ہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *