گیس کی عدم فراہمی پر صنعتکاروں کا وزیرِ اعظم سے نوٹس لینے کا مطالبہ

کراچی : نارتھ کراچی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ اینڈ انڈسٹری (نکاٹی) کے صدر فیصل معیز خان نے سوئی سدرن گیس کی وعدہ خلافی اور صنعتوں کو گیس کی عدم فراہمی پر احتجاج کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان سے اس کا نوٹس لینے اور بلا رکاوٹ پیدواری سرگرمیاں جاری رکھنے کے لیے مطلوبہ پریشر کے ساتھ صنعتوں کوگیس کی فراہمی یقینی بنانے کی اپیل کی ہے ۔

ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ نارتھ کراچی کی صنعتوں میں گیس پریشر صفر ہونے سے 50 فیصد پیداواری سرگرمیاں رک گئی ہیں ۔ جس کی وجہ سے بروقت برآمدی آرڈرز کی تکمیل دشوار ہوتی جارہی ہے جبکہ برآمدی آڈرز منسوخ ہونے کے خطرات بھی منڈلا رہے ہیں۔

فیصل معیز خان نے ایس ایس جی سی کی دہری پالیسی پر تنقید کرتے ہوئے کہاکہ ایک طرف نارتھ کراچی کی صنعتوں کو معمول کے گیس نرخوں سے زائد 930 روپے ایم ایم بی ٹی یو کے نرخ پر گیس بل ارسال کیے جا رہے ہیں مگر وعدے کے مطابق ایس ایس جی سی صنعتوں کو مکمل پریشر کے ساتھ گیس فراہم نہیں کر رہی ۔

حالانکہ یہ یقین دہانی کروائی گئی تھی کہ اگر صنعتکار پرانے ٹیرف کی بجائے اضافی ٹیرف پر گیس لیں گے تو آر ایل این جی سسٹم میں داخل کرکے صنعتوں کو مکمل پریشر کے ساتھ پورا ہفتہ بلارکاوٹ گیس فراہم کی جائے گی۔

مزید پڑھیں: نکاٹی کے نو منتخب عہدیداروں نے ذمہ داریاں سنبھال لیں

انہوں نے مزید کہاکہ صنعتکاروں نے فروری تک مہنگی گیس لینے پر حامی بھری مگر افسوس سوئی سدرن گیس نے اپنا وعدہ پورا نہیں کیا البتہ مہنگے ٹیرف کے نام پر صنعتکاروں سے بل کی مد میں رقم بٹورنے کا عمل پوری ذمہ داری کے ساتھ جاری ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ سوئی سدرن سروسز فراہم کرنے کی بجائے گیس بل بڑھا کر صرف کمانے میں لگی ہے۔

نکاٹی کے صدر نے بتایا کہ گیس نہ ملنے سے ٹیکسٹائل اور اس سے ملحقہ صنعتوں میں پیداواری سرگرمیاں بہت بری طرح متاثر ہیں اور خدشہ ہے کہ اگر برآمدی شپمنٹ بروقت روانہ نہ کی گئیں تو برآمدی آرڈرز منسوخ ہو سکتے ہیں جس سے برآمدکنندگان کو خطیر مالی نقصان اٹھانا پڑے گا جو پہلے ہی کرونا وبا سے پیدا ہونے والے سنگین معاشی بحرانوں کا مقابلہ کرتے ہوئے اپنی بقا قائم رکھنے کی جد وجہد کر رہے ہیں۔

فیصل معیز خان نے وزیراعظم عمران خان سے اپیل کی کہ وہ صنعتکاروں سے ساتھ متعدد اجلاسوں میں کیے گئے وعدے پورا کریں اور پیداواری سرگرمیاں بلارکاوٹ جاری رکھنے میں اپنا کردار ادا کرتے ہوئے ایس ایس جی سی کو صنعتوں کو مطلوبہ پریشر کے ساتھ پورا ہفتہ بلاتعطل گیس فراہمی کی ہدایت کریں تاکہ برآمدی آرڈرز کی تکمیل بروقت ممکن بنائی جا سکے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *