خالد خورشید وزیرِ اعلیٰ گلگت کا مضبوط امیدوار مگر کیسے ؟

رپورٹ : عبدالجبار ناصر

وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان کے لئے تحریک انصاف کے خالد خورشید خان مضبوط امیدوار تاہم دو دیگر ارکان بھی سرگرم ہیں ، اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کے امیدوار بھی فائنل نہ ہو سکے ، بلتستان کے بعض ارکان نے فاروڈ بلاک بنانے کا عندیہ دے دیا ہے، جبکہ متحدہ اپوزیشن نے وزیر اعلیٰ کے لئے پیپلز پارٹی کے امجد حسین ایڈووکیٹ اسپیکر و ڈپٹی اسپیکر کے لئے اپنے امیدوار نامزد کر دیئے ہیں ۔

33 رکنی گلگت بلتستان اسمبلی کے جنرل اور مخصوص نشستوں منتخب 33 ارکان کا نوٹیفکیشن 24 نومبر کو ہوا اور 25 نومبر کو 33 میں سے 31 ارکان نے رکنیت کا حلف اٹھایا ۔ دو نشستوں پر کامیاب پیپلز پارٹی کے امجد حسین ایڈووکیٹ نے جی بی اے 4 نگر ایک کی نشست خالی کر دی ہے ، جب کہ تحریک انصاف کے وزارت اعلیٰ کے امیدوار کرنل (ر) عبید اللہ بیگ اسلام آباد میں موجودگی کی وجہ سے پہلے دن حلف نہ اٹھا سکے ۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اتحادی جماعت سمیت 33 میں سے 23 ارکان کی حمایت رکھنے والی تحریک انصاف کی جانب سے 3 ارکان وزارت اعلیٰ کے امیدوار ہیں ۔ جن میں جی بی اے حلقہ 2 گلگت 2 سے منتخب رکن فتح اللہ خان، جی بی اے 6 ہنزہ ون کے کرنل عبیداللہ بیگ اور جی بی اے 13 استور ون کے خالد خورشید خان شامل ہیں اور تین ناموں کی فہرست حتمی منظوری کے لئے وزیر اعظم عمران کو بھیج دی گئی ہے ۔

مذید پڑھیں : وزیر اعظم کو ٹھنڈی بوتلیں اور اعلی پلیٹوں میں کھانا کیوں نہیں دیا گیا ؟

ذرائع کے مطابق ابھی تک خالد خورشید خان کی پوزیشن مستحکم ہے اور کئی مقتدر حلقوں نے بھی منظوری دی ہے ، تاہم کرنل عبیداللہ بیگ نے ابھی تک ہار نہیں مانی ہے اور ایک اہم سفارش کے ساتھ اسلام آباد میں موجود ہیں ۔ تحریک انصاف کے صوبائی جنرل سیکریٹری فتح اللہ خان بھی سر گرم ہیں ،تاہم ان کے لئے ان کی نشست کا متنازع ہونا مشکلات پیدا کر رہا ہے ۔

تحریک انصاف کی جانب سے اسپیکر کے لئے جی بی اے 11 کھرمنگ ون کے سید امجد علی کو نامزد کیا ہے ،تاہم اعلان نہیں کیا ہے ۔ ڈپٹی اسپیکر کے لئے کرنل عبیداللہ بیگ کو راضی کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے ،مگر وہ وزیر اعلیٰ سے کم پر تیار نہیں ہیں ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ بلتستان سے تعلق رکھنے والے تحریک انصاف کے بعض ارکان نے وزارت اعلیٰ کا عہدہ بلتستان ریجن کو نہ دینے پر احتجاج اور پارٹی میں فاروڈ بلاک کا عندیہ دیا ہے اور اپوزیشن نے فیصلہ کیا ہے کہ ایسی صورت میں وہ فاروڈ بلاک کا ساتھ دیں گے ۔

مذید پڑھیں : اخبارات کے بجٹیڈ واجبات 1 ماہ اور نان بجٹیڈ 15 روز میں ادا کرنے کا عدالتی حکم

متحدہ اپوزیشن کے 9 ارکان نے وزیر اعلیٰ کے لئے پیپلز پارٹی کے جی بی اے 1 گلگت 1 سے منتخب امجد حسین ایڈووکیٹ ، اسپیکر کے لئے جی بی اے 21 غذر 3 سے منتخب مسلم لیگ (ن)کے غلام محمد اور ڈپٹی اسپیکر کے لئے جی بی اے 17 دیامر 3 سے منتخب جمعیت علماء اسلام کے حاجی رحمت خالق کو امیدوار نامزد کیا ہے۔ اسپیکر و ڈپٹی اسپیکر کا انتخاب جمعرات (آج) شام کو ہو گا، جب کہ وزیر اعلیٰ کا انتخاب جمعہ کو (کل ) متوقع ہے ۔

ایک نشست خالی ہونے سے 33 رکنی ایوان 32 ارکان رہ گئے ہیں ۔ جن میں تحریک انصاف کے 20، پیپلز پارٹی کے 4، مسلم لیگ (ن) کے 3، مجلس وحدت مسلمین کے 3 (دو ارکان مخصوص نشستوں پر تحریک انصاف کے کوٹے پر)، جمعیت علماء اسلام اور آزاد ایک ایک رکن ہے ۔