جامعۃ الشیخ کے تحت چوتھا سالانہ مُحسنِ انسانیت سیمینار

کراچی : جامعۃ الشیخ کے تحت رباط العلوم الاسلامیہ لائبریری بہادر آباد میں ’’چوتھا سالانہ محسن انسانیت ﷺ سیمینار‘‘ کا انعقاد کیا گیا ، جس کی سر پرستی مفتی مختار الدین شاہ اور شیخ الحدیث مولانا محمد یوسف مدنی نے نگرانی کے فرائض انجام دیئے تھے ۔

جامعۃ الشیخ یحییٰ المدنی کے شیخ الحدیث حضرت مولانا محمد یوسف مدنی نے سمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حالیہ گستاخی کے واقعات کا سب سے موثر جواب یہی ہے کہ ہم نظریاتی اور عملی طور پر سیرت طیبہ کو اپنائیں ۔ اس بات پر ہم سب کا یقین کامل ہونا چاہئے کہ نبی کریم ﷺ کا طریقہ، آپ کی لائی ہوئی تہذیب و ثقافت ہی دنیا میں سب سے اعلیٰ ارفع ہے، دنیا کے سارے ماڈرن نام نہاد کلچر وہی زمانہ جاہلیت کی نئی شکلیں ہیں، جنہیں حجۃ الوداع کے موقع پر نبی کریم ﷺ کے اپنے قدموں تلے روندا تھا۔ ہمیں عملی طور پر آپ ﷺ کے طریقوں اور آپ کی سنتوں کو اپنانا اور انہیں حرز جاں بنانا چاہئے ۔

مزید پڑھیں: جامعۃ الشیخ بہادرآباد میں محسن انسانیت سیمینار کی تیاری مکمل کرلی گئیں

سالانہ محسن انسانیت ﷺ سمینار میں ممتاز علمائے کرام، مشائخ عظام، مدارس و عصری تعلیمی اداروں کے طلبہ، کاروباری شخصیات ،مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والےمرد و خواتین نے تمام تر حفاظتی انتظامت کے ہمراہ بڑی تعداد میں شرکت کی ۔

جامعۃ الشیخ کا مشن معاشرے میں اس فکر کو زندہ کرنا ہے ۔ رواں سال سال جامعۃ الشیخ کے تحت ماہ ربیع الاول میں اندرون وبیرون شہر سیرت طیبہ کے تقریبا 80 پروگرام منعقد کئے گئے ۔ اس موقع پر حضرت مولانا محمد یوسف نے ’’چوتھا سالانہ محسن انسانیت سیمینار ‘‘ کے تمام شرکاء کا شکریہ ادا کیا ۔ آخر میں جامع مسجد عالمگیر کے امام و خطیب اور بزرگ عالم دین حضرت مولانا مفتی سعید احمد صاحب دامت برکاتہم العالیہ نے دعا کرائی ۔