رجسٹرار کو آپریٹو سوسائٹیز کا عدالتی حکم ماننے سے انکار

کراچی : رجسٹرار کو آپریٹو سوسائٹیز نے من مانیاں کرتے ہوئے سندھ ہائی کورٹ کے احکامات کی دھجیاں اڑا دیں ہیں ۔ ماہی گیروں نے سخت احتجاج کی کال دے دی ہے ۔فشر مینز کو آپریٹو سوسائٹی نے ممبر شپ کی اسکروٹنی کے لیے سندھ ہائی کورٹ سے حکم امتناعی لے رکھا ہے ۔

رجسٹرار کو آپریٹو سوسائٹیز نے سٹی کورٹ اور سندھ ہائی کورٹ کے احکامات کو ماننے سے انکار کرتے ہوئے فشر مینز کو آپریٹو سوسائٹی میں ہونے والی ممبر شپ اسکروٹنی کمیٹی کی میٹنگ کو رکوا دیا ہے ۔ رجسٹرار کوآ پریٹو کی اس غیر قانونی حرکت اور سندھ ہائی کورٹ کے احکامات کو نہ ماننے کی اطلاع کے بعد ماہی گیروں میں اشتعال پھیل گیا ہے ۔

ماہی گیروں کی بڑی تعداد نے فشر مینز کو آپریٹو سوسائٹی پہنچ کر اپنے لائے عمل کا اعلان کرتے ہوئے عدالتی احکامات نہ ماننے والے رجسٹرار کو آپریٹو کے خلاف سخت احتجاج کی کال دے دی ہے ۔ ماہی گیر رہنماوں کا کہنا تھا کہ پہلے مرحلے میں ماہی گیر آئی سی آئی پل پر دھرنا دے کر راستے بلاک کر کے سخت احتجاج کریں گے ۔

مذید پڑھیں : میڈیا کو تحریک لبیک کی کوریج سے روک دیا گیا

دوسرے مرحلے میں لاکھوں ماہی گیر نیٹی جیٹی پل پر احتجاجی دھرنا دیں گے اور رجسٹرار کو آپریٹو کے غیر قانونی احکامات واپس لینے تک احتجاج جاری رکھیں گے اور تیسرے مرحلے میں بڑی تعداد ماہی گیر کراچی پریس کلب پر تادم مرگ بھوک ہرتال کریں گے ۔ اور وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ سے مطالبہ کریں گے کہ عدالتی احکامات نہ ماننے والے رجسٹرار کوآپریٹو کو فوری طور پر معطل کر کے اس کے خلاف محکمانہ کارروائی عمل میں لائی جائے ۔

ماہی گیروں کا کہنا تھا کہ 75 سال کے بعد فشر مینز کو آپریٹو سوسائٹی پر قابض جعل سازوں کیخلاف اسکروٹنی کا عمل جاری ہے اور گزشتہ 20 سال تک حقیقی ماہی گیروں کو ممبر شپ سے محروم رکھا گیا ہے ۔ ان حقیقی ماہی گیروں کو ممبر شپ دینے کے لیے شفاف طریقے سے پراسس جاری ہے ۔

ماہی گیروں کا کہنا تھا کہ رجسٹرار کو آپرٹیو نے اسکروٹنی کمیٹی کی میٹنگ رکوا کر اور عدالتی احکامات کو ماننے سے انکار کر کے نہ صرف جعل ساز ٹولے کو سپورٹ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ۔ بلکہ گزشتہ 20 سال سے ممبر شپ کے حصول کے لیے کوشاں حقیقی ماہی گیروں سے کھلی دشمنی پر اتر آئے ہیں ۔

مزید پڑھیں : تربیتی کنونشن میں ISF کارکنان منشیات استعمال کرنے لگے

ماہی گیر رہنماوں کا یہ بھی کہنا تھا کہ انہیں لگتا ہے کہ رجسٹرار کو آپریٹو کے عرصہ دراز سے فشر مینز کو آپریٹو سوسائٹی پر قابض جعل ساز ٹولے کے ساتھ کچھ مفادات وابستہ ہیں ۔ جس کی وجہ سے وہ حق کا ساتھ دینے کے بجائے جعل سازوں کو فائدہ پہنچانے کی کوشش کر رہے ہیں ۔ اور سندھ ہائی کورٹ کے احکامات کو بھی یکسر نظر انداز کر کے توہین عدالت کے مرتکب ہو رہے ہیں ۔

ماہی گیروں نے کہا کہ جعل سازوں کو سپورٹ کرنے،ممبر شپ کی اسکروٹنی اور نئی ممبر شپ کے حصول میں رکاوٹیں پیدا کرنے والے عناصر کو ہر گز بخشا نہیں جائے گا ۔ ماہی گیر اپنے ادارے کی بقا ء اور اپنے حقوق سے کسی بھی صورت دست بردار نہیں ہونگے ۔ اور اپنے راستے میں آنے والی ہر رکاوٹ کو پاش پاش کر دیں گے ۔

ماہی گیروں کا کہنا تھا کہ رجسٹرار کو آپریٹو نے اگر 24 گھنٹوں تک اپنے غیر قانونی احکامات واپس اور جعل سازوں کی سپورٹ ترک نہ کی تو پھر دما دم مست قلندر ہو گا ۔ اور رجسٹرار کو آپریٹو کی معطلی تک ماہی گیروں کا احتجاج جاری رہے گا ۔