ضلع سانگھڑ کو نوابشاہ بورڈ میں شامل کرنے کیخلاف ایپکا کا احتجاج

میر پور خاص : تعلیمی بورڈ بچاؤ تحریک زور پکڑنے لگی ہے ۔ احتجاجی تحریک میر پور خاص سے نکل کر دوسرے شہروں تک پھیلنے لگی ہے ۔ آل پاکستان کلرکس ایسو سی ایشن (ایپکا) سندھ، ضلع سانگھڑ  کو نواب شاہ تعلیمی بورڈ میں شامل کرنے کے خلاف میدان میں آ گئی ہے ۔

مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ طلبہ کے لیے مشکلات اور ملازمین کا معاشی قتل عام ہر گز قبول نہیں کر سکتے ۔ ایپکا سندھ کی جانب سے اولڈ کیمپس سے حیدر آباد پریس کلب تک میرپور خاص تعلیمی بورڈ کے حق میں احتجاجی ریلی نکالی ۔ جس میں ضلع سانگھڑ کو نوابشاہ بورڈ کے ساتھ ناجائز الحاق کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی ۔

ایپکا سندھ کے صوبائی جنرل سیکریٹری اشرف خان بوزئی، صدر ایپکا تعلیمی بورڈ نعمان احمد راجپوت ، جنرل سیکریٹری علی شان شاہ ، ارشد زبیر ڈسٹرکٹ نائب چیئرمین میرپور خاص اور دیگر ریلی میں خصوصی شریک ہوئے ۔

مزید پڑھیں: ایپکا کی ایپل پر ضلعی تعلیمی دفاتر میں قلم چھوڑ ہڑتال

ریلی کے شرکاء نے احتجاجی بینر اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے ، جس پر تعلیمی بورڈ میر پور خاص بچاؤ ، ضلع سانگھڑ کا تعلیمی بورڈ نوابشاہ میں الحاق نا منظور کے نعرے درج ہونے کے ساتھ سندھ حکومت کی جانب سے تمام تعلیمی بورڈز کے واجبات ادا نا کرنے کے مطالبات شامل تھے ۔

مقررین نے ریلی کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے تعلمی بورڈ نواب شاہ میں ضلع سانگھڑ کے الحاق کو  مسترد کرتے ہوئے  شدید نعرے بازی کی ۔ صوبائی جنرل سیکریٹری اشرف خان بوزئی ، جنرل سیکرٹری تعلیمی بورڈ حیدر آباد غلام قادر بھٹو ، صدر تعلیمی بورڈ حیدر آباد عزیز قریشی، شاہد لطیف اور ارشد زبیر نے کہا کہ میرپور خاص تعلیمی بورڈ اور دیگر تمام تعلیمی بورڈز کے ملازمین کے ساتھ زیادتیاں جاری ہیں جو کہ کسی طور پر قابل قبول نہیں ۔

اگر ضلع سانگھڑ کو نواب شاہ بورڈ میں الحاق روکا نہ گیا تو ہم اپنے احتجاجی دائرے کو مزید وسیع کر کے کراچی پریس کلب پر مطالبات کی منظوری تک دھرنا دینگے ۔ علاوہ ازیں پورے سندھ کے ایپکا کے عمائدین کو اکٹھا کر کے وزیر اعلیٰ ہاؤس کی طرف مارچ کریں گے ۔ ریلی کے اختتام پر ایپکا یونٹ تعلیمی بورڈ کے صدر نعمان احمد راجپوت نے احتجاجی ریلی میں شامل صوبائی اور ضلعی قیادت کے علاوہ دیگر تمام اداروں سے آئے ہوئے تمام ملازمین کا شکریہ ادا کیا ۔