علامہ راشد سومرو کا IG سندھ سے فورتھ شیڈول لسٹ پر تحفظات کا اظہار

کراچی : جمعیت علماء اسلام صوبہ سندھ کے سیکریٹری جنرل علامہ راشد محمود سومرو نے انسپکٹر جنرل آف سندھ پولیس مشتاق احمد مہر سے ان کی دفتر میں ملاقات کی ۔ انہوں نے آئی جی سندھ سے جامعہ فاروقیہ کے مولانا ڈاکٹر عادل خان شہید کیس میں سست روی ، مفتی عبداللہ سمیت دیگر علماء کرام پر ہونے والے پے در پے حملوں پر جمعیت علماء اسلام کی جانب سے بھر پور تحفظات ، غم و غصہ اور تشویش سے آگاہ کیا ۔

مولانا راشد محمود سومرو نے کہا کہ  جمعیت علماء اسلام کی صفوں میں حالیہ دہشت کی لہر سے شدید بےچینی پائی جارہی ہے ، ان حالات میں قانون نافذ کرنے اداروں کی ذمہ داری بڑھ جاتی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ سندھ بھر میں 30 سے زائد جمعیت علماء اسلام کے ذمہ داران کا فورتھ شیڈول میں شامل کیا جانا کسی صورت قبول نہیں ، اس کے علاوہ شہید اسلام کانفرنس لاڑکانہ کی سکیورٹی و دیگر معاملات پر تفصیلی ملاقات ہوئی ۔

مزید پڑھیں: جے یو آئی سندھ کے تحت آل پارٹیز کانفرنس 9 جولائی کو ہوگی

آئی جی سندھ مشتاق مہر نے یقین دھانی کروائی کہ مولانا ڈاکٹر عادل خان شہید کے قاتل اور مفتی عبداللہ کے حملہ آور نہ صرف بے نقاب ہوں گے، بلکہ ان کو کیفر کردار تک بھی پہنچایا جائے گا ، آانہوں  نے یہ بھی یقین دہانی کرائی کہ فورتھ شیڈول میں شامل جمعیت علماء اسلام کے ذمہ داران کو فی الفور نکالا جائے گا اور شہید اسلام کانفرنس لاڑکانہ کو بھرپور سکیورٹی فراہم کی جائے گی۔

دریں اثناء جمعیت علماء اسلام کراچی کے تمام اضلاع کے تحت جمعتہ المبارک کے بعد سہہ پہر 3 بجے کراچی پریس کلب پر تحفظ ناموس رسالت مظاہرہ کیا جائے گا، مظاہرے سے صوبائی سیکرٹری جنرل مولانا راشد محمود سومرو ، مولانا عبدالکریم عابد، محمد اسلم غوری، مولانا محمد غیاث، مولانا امین اللہ، ڈاکٹر نصیر الدین سواتی ، مولانا عمر صادق، مولانا احسان اللہ ٹکروی، مولانا نورالحق ، مفتی عبدالحق عثمانی، مولانا فتح اللہ، مولانا عبدالرشید نعمانی،شرف الدین اندھڑ،  ودیگر ذمہ داران خطاب کریں گے ۔

مذید پڑھیں : مبشر لقمان اور AKD پر فردِ جُرم عائد جبکہ رانا عظیم اشتہاری قرار

علامہ راشد محمود سومرو نے تمام کارکنان سے تحفظ ناموس رسالت مظاہرے میں بھرپور شرکت کی اپیل کرتے ہوئے کہا ہیکہ کل کوئی کارکن گھر پر نہ رہے جمعتہ المبارک کی نماز کی ادائیگی کے بعد عوام کے جم غفیر کے ہمراہ کراچی پریس کلب کا رخ کریں ، جمعیت علماء اسلام فرانس میں توہین آمیز خاکے آویزاں کرنے کیخلاف پورے ملک میں سراپا احتجاج ہے، فرانسیسی صدر کے مکروہ عمل سے امت مسلمہ کے جذبات مجروح ہوئے ہیں ، قوانین کیخلاف جاری سازشوں کو کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دی گی ۔