حجاب کرنے پر نوکری سے فارغ کر دیا گیا

حجاب چھوڑ دو یا نوکری؛ کراچی کی کمپنی نے ملازمہ کو نکال دیا۔ یہ جملہ سوشل میڈیا پر کیا گردش ہوا کہ سوشل میڈیا کے ہزاروں صارفین نے کمپنی کے اس اقدام کو آڑھے ہاتھوں لیا ۔

ہوا یوں کہ کراچی میں قائم ایک سافٹ ویئر کمپنی نے حجاب کرنے والی ملازمہ کو نوکری سے نکال دیا۔ جس کے بعد خاتون حرا بتول نے روداد کو سوشل میڈیا پر ڈال دیا ۔

خاتون کے اسٹیٹس کے مطابق ” خاتون کو سافٹ ویئر کمپنی Creative Chaos کے منیجر نے دفتر میں بلاکر کہا کہ حجاب کے باعث کمپنی کا ’امیج خراب‘ ہورہا ہے۔ اسلئے اگر نوکری جاری رکھنا چاہتی ہیں تو حجاب ترک کرنا ہوگا۔

خاتون نے حجاب ترک کرنے سے انکار کردیا جس پر منیجر نے انہیں استعفیٰ دینے کا حکم دیا ۔متاثرہ خاتون نے کہا کہ حجاب یا نوکری چھوڑنے کا حکم کاغذ پر لکھ کر انہیں دے دیں، جس پر منیجر نے انکار کیا اور زبردستی نوکری سے استعفیٰ دینے پر مجبور کیا۔

متاثرہ خاتون کا کہنا تھا کہ منیجر نے طنز کرتے ہوئے کہا کہ آپ کسی ’اسلامی بینک‘ میں اپلائی کریں۔ کیونکہ ہماری کمپنی میں اس طرح نوکری نہیں چل سکتی ۔

معاملہ سوشل میڈیا پر آنے کے بعد کمپنی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر جواد قادر نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے منیجر کے اس عمل کو ’امتیازی سلوک اور شرمناک‘ قرار دیتے ہوئے اس پر خاتون سے معذرت کی ۔

سی ای او کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق ان سے ’بڑی غلطی‘ ہوگئی ہے اور وہ اس پر ’سخت شرمندہ‘ ہیں۔

جواد قادر نے کہا کہ متاثرہ خاتون سے معذرت کرکے انہیں دوبارہ نوکری کی پیشکش کی ہے

کمپنی کا موقف ہے کہ مذکورہ منیجر کو معطل کردیا ہے،اور معاملے کی شفاف انکوائری کرائی جائے گی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *