چنیوٹ کا مدرسہ گرانا دہشت گردی ہے ۔وفاق المدارس

چنیوٹ میں مولانا منظور چنیوٹی کا مدرسہ شہید کرنے کی جسارت افسوسناک اور قابل مذمت ہے۔

وزیر اعظم صورت حال کا فوری نوٹس لیں
مدرسہ مسمار کرنے کی ذمہ دار انتظامیہ کو فوری طور پر برطرف کیا جائےاور قرار واقعی سزا دی جائے۔

دینی مدارس کو سیاسی انتقام کانشانہ بنانےکی ہرگز اجازت نہیں دی جائے گی
مدرسہ کی فوری طورپر از سرنو تعمیر کروائ جائے اور مدرسہ مسمار کرنے والوں کی تنخواہ سے اخراجات وصول کیے جائیں؟

ان خیالات کا اظہار وفاق المدارس العربیہ پاکستان کے قائدین مولانا ڈاکٹر عبدالرزاق اسکندر،مولانا انوارالحق،مولانامفتی محمد رفیع عثمانی اورمولانا محمد حنیف جالندھری نے چنیوٹ میں مولانا منظور چنیوٹی کے قائم کردہ قدیم دینی مدرسہ کو شہید کرنے کی اطلاعات پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کیا-وفاق المدارس کے قائدین نے اس سانحہ کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے وزیر اعظم سے صورتحال کا فوری نوٹس لینے کامطالبہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ ایک رجسٹرڈ،قدیم اور قانونی مدرسہ کو مسمار کرنے کے ذمہ دار عناصر اور انتظامیہ کو فوری طورپر برطرف کر کے قرارواقعی سزا دی جائے-وفاق المدارس کےقائدین نے کہا کہ سیاسی محاذ آرائی اور شخصی لڑائیوں کی بنا پردینی مدارس کےخلاف کسی قسم کی مہم جوئی برداشت نہیں کی جائے گی-

وفاق المدارس کے قائدین نے مطالبہ کیا کہ چنیوٹ کے مدرسہ کو فوری طور پر از سرنو تعمیر کیا جائے اور اس کے اخراجات مسمارکرنے والوں کی تنخواہ سے وصول کیے جائیں ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *