رسی جل گئی پر بل نہیں گیا

قیوم آباد ایم کیو ایم لندن کے ٹارگٹ کلر رئیس مما کا قریبی ساتھی ٹارگٹ کلر اور متعدد ATCایف آئی آر میں مطلوب سابق چیئرمین یوسی 37 اور پاکستان تحریک انصاف کی چھتری کے نیچے پناہ لینے والا تحریک انصاف یوسی 37 کا جنرل سیکرٹری شمشاد خان تنولی عرف چٹا  اونچیے ہٹگنڈوں پر اتر آیا ایجنسیز کے نام سے پرائیویٹ فون نمبروں سے کال کروا کر اپنے حریفوں کو ڈرانے دھمکانے لگا۔

تفصیلاتکے مطابق کچھ دن قبل قیوم آباد کے رہاشی اور پاکستان مسّلم لیگ ن کے کارکن نوید سائیں کو قیوم آباد کے رہاشی ساجد نامی شخص کا فون آیا کے آپکا موبائل فون نمبر مجھ سے سابقہ چیئرمین شمشاد خان تنولی عرف چٹا مانگ رہا ہے جو کے مسلم لیگی کارکن نوید سائیں نے کہا میرا نمبر دے دو نمبر دینے کے کچھ دیر بعد نوید سائیں کو ایک پرائیویٹ نمبر سے فون آیا فون کرنے والے نے اپنا نام بتاۓ بغیر نوید سائیں کو جناح اسپتال کے پاس آنے کو کہا

مزید پڑھیں: ایم کیو ایم کے یونٹ 133 کا دفاتر بھوت بنگلہ بن گیا

جس پر نوید سائیں نے کال کرنے والے شخص کو اپنا تعارف کروانے کو کہا تو کال کرنے والے شخص نے کہا میں ایجنسی کا بندہ ہوں اگر آپ یہاں نہ آئے تو اٹھا کر لے جاؤں گا جس پر نوید سائیں نے دوبارہ ساجد نامی شخص سے رابطہ کیا تو ساجد نے کہا میں نے آپ کا نمبر شمشاد خان تنولی عرف چٹا کو ہی دیا ہے آگے کا مجھے کچھ نہیں معلوم اس کے بعد پرائیویٹ نمبروں سے دھمکی آمیز کالز کا تانتا بندھ گیا

جو کے نوید سائیں نے اپنے  یوسی کے مسلم لیگی رہنماؤں سے رابطہ کیا جس کے بعد تمام حالات و واقعات کا جائزہ لے کر متعلقہ تھانہ ڈیفنس میں ایک تحریری طور پر درخواست جمع کروا دی مسّلم لیگی رہنما نوید سائیں کا کہنا ہے میں کسی غلط کام میں ملوث نہیں ہوں اگر ہمارے ملکی اداروں کے پاس میری کوئی شکایت گئی ہے تو میں اس کا سامنا کرنے کو تیار ہوں مجھے میرے ملکی اداروں پر پورا بھروسہ ہے میں اپنے ملک اداروں کی قدر کرتا ہوں

مزید پڑھیں: ہمیں احتجاج پر مجبور نہ کیا جائے : ایم کیو ایم ٹھٹھہ

سابقہ یوسی چیئرمین شمشاد خان تنولی عرف چٹا ایم کیو ایم لندن کا سابقہ سرگرم کارکن اور کورنگی سیکٹر انچارج رائیس مما کا قریبی ساتھی رہا ہے ان کا کوئی روزگار نہیں انکے اساسؤں کی تحقیقات کی جاۓ انکے شاہی اخراجات کہاں سے پورے ہوتے ہیں اگر باریک بینی سے پتہ چلایا جاۓ تو آج بھی علاقے سے بھتہ خوری سے ہی اخراجات پورے ہوتے ہیں

یوسی چیئرمین کے عہدے سے ریٹائرمنٹ  ہونے کے بعد پاکستان تحریک انصاف میں  شمولیت کا مقصد بھی اپنے جرائم پر پردہ پوشی ہے اس کے خلاف کراچی کے مختلف تھانوں میں 100 سے زائد مقدمات درج ہیں جس میں کہی ATC دفعات کے مقدمات  بھی قائم ہیں اور عدالتوں میں زیر سماعت ہیں میں آپ کی خدمات میں کچھ وائس ریکارڈنگ پیش کرنا چاہتا ہوں جس میں سابقہ چیئرمین اور پاکستان تحریک انصاف کا جنرل سیکرٹری یوسی 37 شمشاد خان تنولی عرف چٹا ایک شہری کو فون کرکے دھمکیاں دے رہا ہے اور اس کے بعد سندھ پولیس کو  کھلم کھلا گالم گلوچ کر رہا ہے

مزید پڑھیں: انجمن اساتذہ کراچی کا فرانسیسی حکومت کیخلاف مظاہرہ اور واک

اس کے علاوہ مزید وائس ریکارڈنگ میں ساجد نامی شخص جس سے نوید سائیں  کا نمبر حاصل کیا اس کو بول رہا ہے انہوں نے تھانے میں درخواست دی ہے اگر آپ کو پولیس بلائے تو ان کو بولنا مجھ سے شمشاد خان تنولی نے کوئی نمبر نہیں لیا وه کسی اور نوید کا نمبر مانگ رہا تھا تاکہ جھوٹ کا سہارا لے کر بچ جاوں جس پر ساجد نامی شخص نے صاف انکار کر دیا اور تمام وائس ریکارڈنگ نوید سائیں کے گھر والوں کے حوالے کردیں

جس پر سابقہ چیئرمین اور پاکستان تحریک انصاف یوسی 37 کے جنرل سیکرٹری شمشاد خان تنولی نے ساجد نامی شخص کو بھی نہ بخشا اس دوسرے دن ہی تھانہ ڈیفنس پولیس سے ساجد نامی شخص کو بھی جھوٹے مقدمات میں بند کروا دیا جو کے اس وقت جیل میں سلاسل ہے مسلم لیگی کارکن نوید سائیں نے حکام بالا سے پرزور اپیل کی ہے کے میں اگر کسی جرائم میں ملوث ہوں تو میں سزا کے لئے تیار ہوں   سابقہ چیئرمین اور پاکستان تحریک انصاف یوسی 37 کے جنرل سیکٹری شمشاد خان تنولی کو ایسے ہتھگنڈوں  سے روکا جائے ایم این اے فہیم خان ایم پی اے راجہ اظہر اور پاکستان تحریک انصاف کی اعلیٰ قیادت سے اپیل ہے اپنے جنرل سیکٹری شمشاد خان تنولی کو روکا جائے