واٹر بورڈ نے راشد صدیقی کیلئے نیا عہدہ و مراعات جاری کر دیں

کراچی : واٹر بورڈ نے مالی کمی کے باوجود جونیئر افسر راشد صدیقی کو نوازنے کے لئے نیا عہدہ تخلیق کر دیا ہے ۔

واٹر بورڈ میں الیکٹریکل اینڈ مکینکل (ای اینڈ ایم )کے گریڈ 17 کے انجنیئر راشد صدیقی کے لئے انوکھا لیٹر ڈائریکٹر پرسنل حشمت اللہ صدیقی نے جاری کیا ہے ۔

الرٹ نیوز کو موصول ہونے والے لیٹر کے مطابق راشد صدیقی ایمپلائی نمبر No.007898-8 جو اس وقت ضلع ایسٹ میں ایگزیکٹیو انجنیئر (ای اینڈ ایم )تعینات ہیں ان کو اضافی چارج دیتے ہوئے انسداد چوری سیل (Anti Theft Cell) کا انچارج بنا دیا گیا ہے ۔

مذید پڑھیں : آلو ، ٹماٹر ، دودھ سمیت 14 اشیاء ضروریہ کی قیمتوں میں مزید اضافہ

نوٹی فکیشن میں لکھا گیا ہے کہ راشد صدیقی کی ڈیوٹی یہ ہو گی کہ وہ غیر قانونی کنکشنوں کو ختم کریں گے ۔ غیر قانونی انڈسٹریل کنکشن ، کمرشنل کنکشن اور گھریلو کنکشن تک کا خاتمہ کرنا ان کی ذمہ داریوں میں شامل ہے ۔ یہاں تک کہ کھارے پانی ( Subsoil ) کے نیٹ ورک کا خاتمہ کرنا بھی ان کی ذم داری ہے ۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ راشد صدیقی پر مہربانیاں کرتے ہوئے ان کا نہ صرف عہدہ تخلیق کیا گیا ہے بلکہ ان کے لئے بجٹ اور اضافی نفری رکھنے کی گنجائش نکالی گئی ہے ۔

واٹر بورڈ کے جونیئر افسر راشد صدیقی کے حوالے سے جاری کئے جانے والے نوٹی فکیشن کا عکس

معلوم رہے کہ واٹر بورڈ میں سیکورٹی کا باقاعدہ ایک شعبہ ہے ۔ جس کا سربراہ ریٹائرڈ کرنل ہے ۔ اس سے قبل ریٹارئرڈ میجر تھا ۔ کرنل اب تک لائنوں کے دورے تک کرنے سے قاصر ہیں جبکہ تنخواہیں برابر وصول کررہے ہیں تایم ایسے میں راشد صدیقی پر مہربانی کرتے ہوئے ان کو نیا عہدہ دیا گیا ہے ۔

مذید ہڑھیں : بھارت سے ٹریننگ کے الزام میں واٹر بورڈ کا ملازم عبدالجبار عرف ٹینشن FIA کے ہاتھوں گرفتار

واضح رہے کہ عدالت کی جانب سے کسی بھی افسر کو دو عہدے دینے سے منع کیا گیا ہے ۔ جبکہ جونیئر افسر کو سینیئر عہدے پر تعینات کرنا واضح طور پر منع ہے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ راشد صدیقی نے مسلم آباد کالونی میں غیر قانونی طور پر ڈبل اسٹوری گھر بنایا ہے اور اس دور میں گھر بنایا جب وہ ہائیڈرنٹ سیل کے انچارج تھے اور انہوں نے اربوں روپے کمائے ہیں ۔

بتایا جاتا ہے کہ راشد صدیقی کافی عرصہ سے اپنی فائلوں پر دو سے تین فیصد کمیشن کما رہے تھے جب کہ ان کو منفعت بخش عہدے دینے کا مقصد ان کو کمانے کا موقع دینا ہے ۔ کیوں کہ واٹر بورڈ کا علاقہ ایکسین بھی غیر قانونی کنکشن نہ صرف ختم کر سکتا ہے کہ بلکہ کوئی بھی اے ای ای کے علاوہ جونیئر افسران و انسپکٹرز بھی یہ کام کر سکتے ہیں ۔