جید عالم دین کی شہادت پر کراچی میں 8 برس بعد کامیاب ہڑتال

کراچی : کراچی میں علمائے کرام کی شہادت کا سلسلہ ایک بار پھر جاری ہوا ، تاہم اب کی بار اہلیان کراچی نے عالم کی شہادت پر 8 برس بعد شٹر ڈائون ہڑتال کامیاب ہڑتال کی ہے ، اس سے قبل الطاف حسین 8 منٹ کے اندر شہر کو زبردستی بند کرایا کرتا تھا تاہم اب شہریوں نے رضا کارانہ طور پر شہر کو بند کیا ہے ۔

مولانا ڈاکٹر عادل خان کے قاتلوں کی عدم گرفتاری کے خلاف علماء کمیٹی کی اپیل پر کراچی میں ہڑتال کی گئی جس کے باعث مارکیٹوں اور تجارتی مراکز میں کاروباری سر گرمیاں معطل اور پبلک ٹرانسپورٹ بند رہی تاہم شام میں کاروباری سرگرمیاں بحال ہو گئیں جب کہ جمعہ کی اجتماعات کے بعد شہر کے مختلف مقامات پر مظاہرے بھی کئے گئے ۔

علماء کمیٹی کی جانب سے مولانا ڈاکٹر عادل خان کے قاتلوں کی تاحال عدم گرفتاری کے خلاف ہڑتال کی اپیل کی گئی تھی جس کے باعث صدر ،ایمپریس مارکیٹ، زینب ، آرام باغ ،جامع کلاتھ اور بولٹن مارکیٹ سمیت اولڈ سٹی ایریا کی تھوک مارکیٹیں بند رہیں ۔

مذید پڑھیں : جامعہ اردو کے ملازمین کا انتظامیہ کیخلاف تیسرے روز بھی احتجاج جاری

اسی طرح ناظم آباد گول مارکیٹ ، واٹر پمپ ،مومن آباد ،جیکسن ،شیر شاہ ،کورنگی ،بنارس ،سہراب گوٹھ اور شہر بھر کے دیگر علاقوں کی مارکیٹیں ،تجارتی مراکز اور شاپنگ سینٹرز بند رہے ۔ جب کہ پبلک ٹرانسپورٹ بھی سڑکوں سے غائب رہی البتہ نجی گاڑیاں چلتی رہیں ۔

اس دوران سڑکوں پر پبلک ٹرانسپورٹ بھی غائب رہی ، البتہ سبزی ،دودھ ،ادویات اور بیکری سمیت دیگر اشیاء کی ترسیل بحال رہی جب کہ شہری نجی گاڑیوں میں معمولات انجام دیتے رہے ۔

جمعہ کی نماز کے بعد شہر کے مختلف علاقوں میں احتجاجی مظاہرے بھی کئے گئے ۔ جس میں شہریوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔ شہر کے مختلف علاقوں سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق جمعہ کی نماز کے شہر میں کاروباری سرگرمیاں تدریجاً بحال ہونی شروع ہو گئیں اور سڑکوں پر ٹریفک کی روانی بھی معمول پر آ گئی تھی ۔

مذید پڑھیں : قاری محمد عثمان کی مسجد سے مشکوک افراد سامان سمیت گرفتار

ملک بھر کے کئی حصوں اور کئی شہروں میں مکمل شٹر ڈائون ہڑتال کی گئی ، جس میں کاروبار زندگی سمیت تمام ٹرانسپورٹ بھی بند رہی ، کئی شہروں میں ہزاروں کی تعداد میں شرکا جمع ہوئے اور اجتماع جلسوں کی حیثیت اختیار کر گیا ۔

کراچی کے علاقہ دائود چورنگی میں مولانا اقبال اللہ کی قیادت میں بہت بڑا احتجاجی جلسہ کیا گیا جس میں مولانا اونگذیب فاروقی ، مولانا قاری اللہ داد سمیت دیگر علمائے کرام نے شرکت کی ۔ ٹنڈوالہیار میں مکمل شٹر ڈائون ہڑتال کی گئی ۔ گلگت بلتستان میں مولانا قاضی نثار کی قیادت میں بعد از ہڑتال کامیاب احتجاجی جلسہ منعقد کیا گیا ۔ چاغی مین بھی کامیاب ہڑتال کی گئی اور جلسہ بھی کیا گیا ۔