نجی اسکولوں کی لوٹ مار،محکمہ تعلیم کا گٹھ جوڑ سامنے آگیا

کراچی میں نجی اسکولوں کی لوٹ مار اور محکمہ تعلیم سندھ کا گٹھ جوڑ سامنےآگیا ہے ۔ اسکول انتظامیہ اور محکمہ تعلیم دونوں والدین سےتعاون نہیں کرتے اور فیس اسٹرکچر اسکولز کے پاس ہے نہ ڈائریکٹر پرائیوٹ انسٹیٹیوٹ کے پاس ہے جبکہ ڈائریکٹر پرائیویٹ اسکول ڈاکٹر منسوب حسین صدیقی کہتے ہیں کہ ریکارڈ بارش میں خراب ہوچکا۔

جیو نیوز کی نمائندہ عمیمہ ملک کی رپورٹ کے مطابق سندھ میں نجی اسکولوں کی اضافی فیسوں کا معاملہ حل نہ ہوسکا۔ والدین کا کہنا ہے کہ 5؍ فیصد سے زائد فیسیں وصول کی جارہی ہیں، اسکول انتظامیہ اور محکمہ تعلیم دونوں والدین سے تعاون کرنے کو تیار نہیں ، اسکول ہر سال غیر قانونی طور پر سال فیس بڑھا دیتے ہیں ، فیس اسٹرکچر نہ اسکول کے پاس ہے اور نہ ہی ڈائریکٹر پرائیویٹ انسٹیٹیوٹ کے پاس ۔

والدین کا کہنا ہے کہ محکمہ تعلیم سے اس معاملے پر 3؍ بار درخواست کی ہے لیکن محکمہ اسکولوں کا فیس اسٹرکچر دینے سے قاصر ہے، اسکول بغیر کسی اسٹرکچر فیسوں میں من مانا اضافہ کرتے ہیں۔ فیسوں کے معاملے پر کورٹ جانے والے والدین کے وکلاء نے جیو نیوز کو بتایا کہ محکمہ تعلیم کی عدم توجیہی اس معاملے کو حل نہیں کرپارہی۔ دوسری جانب ڈائریکٹر پرائیویٹ اسکول منسوب صدیقی نے کہا کہ پرائیویٹ اسکولوں کا زیادہ تر ریکارڈ بارش میں خراب ہوچکا

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *