نویں جماعت کی انگریزی سے آخری نبی ﷺ اور صحابہ کے نام غائب

کراچی : سندھ ٹیکسٹ بک بورڈ نے نویں جماعت انگریزی کی کتاب سے آخری نبی اور صحابہ کے نام ختم کر دیئے ‛ 2019 میں شائع ہونے والی کتاب میں حضرت محمد صلی اللہ علیہ وآلیہ وسلم کے مضمون کی تیسری لائن میں آخری نبی کے الفاظ شامل تھے جن کو 2020 میں شائع کتاب سے ختم کر دیا گیا ہے ‛ 2019 کے مصنفین و ریویو کرنے والوں میں بھی تبدیلی کی گئی ہے ۔

محکمہ تعلیم سندھ کے ماتحت ادارے سندھ ٹیکسٹ بک بورڈ کی جانب سے نصاب میں حیران کن تبدیلی کر لی گئی ہے ۔جس کی وجہ سے ملک بھر سمیت دنیا بھر میں پائے جانے والے مسلمانوں میں شدید پریشانی پائی جاتی ہے ۔ دستاویزات کے مطابق سندھ ٹیکسٹ بک بورڈ جامشورو کی شائع کردہ نویں کلاس کی انگریزی کی کتاب کے صفحہ نمبر 2 پر موجود مضمون بعنوان the last sermon of the holy prophet peace be upon him سے حضرت محمد صلی اللہ علیہ و آلیہ وسلم کے نام نامی اسم گرامی کے ساتھ ,,آخری نبی حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم ‛‛ موجود تھا ۔سندھ ٹیکسٹ بک بورڈ 2020 کی کتاب میں اسی مضمون میں بظاہر معمولی مگر حقیقت میں بہت بڑی تبدیلی یعنی حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کے نام نامی کے ساتھ مسلمانوں کے عقیدہ کا اہم جزو یعنی ,, آخری نبی ‛‛ کا لفظ ہی ختم کر دیا گیا ہے ۔مسلمانوں کی جانب سے اس اقدام کو حکومت کا ختم نبوت پر ڈاکہ قرار دیا جا رہا ہے ۔

 

مزید پڑھیں: حکومت سندھ نے محکمہ تعلیم کو مذاق بنا دیا

معلوم رہے 2019 میں سندھ ٹیکسٹ بک بورڈ کے چیئرمین آغا سہیل پٹھان تھے جب کہ اب احمد بخش ناریجو ہیں ۔ اس وقت کتاب کے 5 مصنفین تھے جن میں امینہ خمیسانی ‛ ارشاد انیس ‛ ممتاز اسداللہ ‛ محمد یعقوب مغل اور محسن نقوی تھے ۔جب کہ 2020 میں حیرت انگیز طور پر اس کے مصنفین کی تعداد تین کر دی گئی جس میں فاطمہ صلاح الدین ‛ راحیلہ وقار اور رحمت ابراہیم شامل ہیں ۔ 2019 میں ادارت عبدالفہیم نورانی نے انجام دی تھی جب کہ 2020 والی کتاب میں ادارت کا سلسلہ ختم کر کے اعزازی معاون کار کے طور پر ادیبہ احمد ‛ فرحانہ ناز صدیقی ‛ افشین بشیر ‛ متین احمد شیخ ‛ رضیہ اظہر شیخ اور شبانہ اریس کو شامل کیا گیا ہے ۔

 

اس کے علاوہ 2020 میں جائزہ لینے والوں میں 10 افراد کے نام شامل کیئے گئے ہیں جن میں پروفیسر سید قلندر شاہ ‛ عبدالہادی میمن ‛ عبدالفہیم نورانی ‛ راجیش گوشوانی ‛ تحسین ملک ‛ شبانہ اریس ‛ پروفیسر فاطمہ صلاح شہاب الدین ‛ سید صالح محمد شاہ ‛ سدھیر احمد میمن ‛ عجیب احمد نورانی اور محمد ایاز شاہ کو شامل کیا گیا ہے ۔جب کہ اس کے علاوہ مذید افراد کو نوازتے ہوئے 2020 میں باقاعدہ رابطہ کار عبدالفیہم نوناری کا نام بھی شامل کیا گیا ہے اس کے علاوہ سیکشن انچارج عبدالودود اور پروف ریڈر عجیب احمد نوناری کا نام شامل کیا گیا ہے ۔حیرت انگیز طور پر 2020 کی کتاب کو 23 افراد نے پڑھا اس کے باوجود اس قدر واضح غلطی کی گئی ہے ۔اس حوالے سے دفاع ختم نبوت کونسل کے چیئرمین علامہ ضیاء اللہ سیالوی کا کہنا ہے کہ ہم سندھ ٹیکسٹ بک بورڈ کے چیئرمین سمیت تمام افراد کے نام کو شامل کرکے عدالت سے رجوع کریں گے اور اگر سندھ حکومت نے ان تمام افراد کیخلاف کارروائی نہ کی تو ہم احتجاج کا حق رکھتے ہیں ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *