حکومت سندھ نے IBA کے ڈائریکٹر کی ماہانہ تنخواہ ساڑھے 25 لاکھ مقرر کردی

محکمہ یونیورسٹیز اینڈ بورڈز نے وزیر اعلی سندھ کی منظوری سے اس فیصلے کا باقاعدہ نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا ہے اور جاری کیے گئے نوٹیفیکیشن کے مطابق تنخواہ سمیت دیگر مراعات کا اطلاق ڈاکٹر اکبر زیدی کی تقرری کی تاریخ رواں سال 13 جنوری سے ہوگا-

اس نوٹیفکیشن کے مطابق سندھ کے اعلی سرکاری تعلیمی اداروں (جامعات اور ڈگری ایوارڈنگ انسٹیٹیوٹس) کے سربراہوں میں ڈاکٹر اکبر زیدی سرکاری فنڈز اور طلبہ کی فیسوں سے سب سے زیادہ تنخواہ لینے والے سربراہ بن گئے ہیں-

یاد رہے کہ تنخواہ میں اضافے کی سمری محکمہ یونیورسٹیز اینڈ بورڈز کی جانب سے آئی بی اے کراچی کی سفارش پر تقریباً 8 ماہ قبل حکومت سندھ کو بھجوائی گئی تھی اور نئے ڈائریکٹر کی تنخواہ تقریباً 25 فیصد اضافے کے ساتھ ساڑھے 25 لاکھ روپے ماہانہ مقررکرنے کی سفارش کی گئی تھی-

واضح رہے کہ گزشتہ ڈائریکٹر ڈاکٹر فرخ اقبال نے اپنی تعیناتی کے بعد سندھ کے دیگر وائس چانسلرز / ڈائریکٹرز کے مقابلے میں اس وقت کے گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد سے اپنی تنخواہ میں کئی لاکھ اضافے کے بعد اسے18 لاکھ روپے مقرر کرالیا تھا اور آئی بی اے کے فنانس کے ذرائع کے مطابق گزشتہ برس جب وہ آئی بی اے سے قبل آز وقت سبکدوش ہوئے تو وہ 21 لاکھ روپے ماہانہ تنخواہ لے رہے تھے یہ انکریمنٹ تین سال تک بجٹ میں لگایا گیا تھا-