بدکردار خواتین جامعہ بنوری ٹاؤن کے طلبہ و اساتذہ کوپریشان کرنے لگیں

کراچی کے علاقے جمشید ٹاؤن میں بدکردار خواتین جامعہ بنوری ٹاؤن کے طلبہ اور اساتذہ کو پریشان کرنے لگے-

یہ جمشید ٹاؤن میں واقع جامعہ بنوری ٹاؤن کی شاخ مکتب برائے تحفیظ القرآن کے پڑوس میں دو اوباش اور فاحشہ عورتیں رہتی ہیں اور ہائی لیول پر “پیشہ” کرتی ہیں۔

یہ عورتیں آئے دن مکتب کے بچوں اور اساتذہ کے ساتھ بد تمیزی کرتی رہتی ہیں۔

فوٹو: الرٹ

مدرسہ والوں نے ان کی اس حرکت کی کئی بار شکایت کی ہے مگر ان عورتوں کی اعلی سطح پر پہنچ کے باعث کوئی شنوائی کیلئے تیار نہیں۔

مزید پڑھیے: عالم دین نے قرنطینہ سینٹر کیلئے مدرسہ دینے کی پیشکش کردی

اس حوالے سے سوشل میڈیا پر گردش کرتی ویڈیو میں ان بدکردار خواتین میں سے ایک کو مدرسے کے باہر کھڑی اساتذہ کی بائیکس کی توڑ پھوڑ کرتے واضح دیکھا جا سکتا ہے۔

گزشتہ دن ان عورتوں نے بد تمیزی کی حد ہی کر دی جہاں یہ مشٹنڈیاں بلا روک ٹوک مدرسے میں گھسیں، بچوں کے ساتھ بد تمیزی کی اور انہیں ڈرایا دھمکایا۔

فوٹو: الرٹ

اس کے بعد یہ مدرسے کے سینئر استاد قاری محمد الیاس چترالی کے گھر میں گھس گئیں جہاں قاری صاحب کی دو بچیاں معذور ہیں۔

ان بد مست عورتوں نے قاری صاحب کی اہلیہ کے ساتھ مار پیٹ کے ساتھ ساتھ معذور بچیوں کو بھی نہیں بخشا اور ان معصوموں کو بھی مار پیٹ کر چلی گئیں-