سندھ یونیورسٹی میں فتح محمد برفت کو VC شپ سے ہٹا دیا گیا

کراچی : سندھ یونیورسٹی جام شورو میں اربوں روپے کی کرپشن کرنے والے فتح محمد برفت کے خلاف گرفت مضبوط ہو گئی ۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے ڈنڈا اٹھا لیا ۔ وائس چانسلر پروفیسر فتح برفت کو برطرف کر دیا گیا ۔ وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کے احکامات کے بعد محکمہ بورڈزو جامعات نے نوٹیفیکیشن جاری کر دیا ۔

محکمہ انسداد بدعنوانی سندھ نے اساتذہ اور دیگرعملے کی شکایت پر سندھ یونیورسٹی میں ہونیوالی اربوں روپے کی کرپشن پر انکوائری کا آغاز کیا تھا ، انکوائری رپورٹ کے مطابق فنڈزمیں خرد برد ، غیر ملکی سیر سپاٹے ، فیول اور بھرتیوں کی مد میں بڑے پیمانے پر قومی خزانے کو چونا لگایا گیا تھا یہ تمام رپورٹ وزیر اعلیٰ سندھ کو بھیجی گئی لیکن ڈاکٹر فتح برفت مبینہ طور پر رشوت اور سیاسی اثر و رسوخ کا استعمال کر کے انکوائری پر اثر انداز ہوتے رہے ۔

مذید پڑھیں : جامعہ کراچی، وائس چانسلر کے انٹرویوز کیلئے 7 نام منتخب

بعد ازاں عدالت کو گمراہ کر کے حکم امتناع لیا تھا ۔ سندھ یونیورسٹی میں ہونیوالی کرپشن کی کئی بار نشاندہی کی گئی ، ڈاکٹر فتح برفت اور انکے دست راست امیر علی ابڑو سمیت سندھ کی بعض سیاسی جماعت کے لوگوں کی ملی بھگت کے باعث یونیورسٹی کے فنڈزمیں خرد برد کے علاوہ زمینوں پر قبضے اور جنسی ہراسگی کی شکایات بھی سامنے آئی تھی ۔

چند روز قبل فتح برفت سمیت ان کے دیگر حواریوں کے خلاف مقدمہ درج کرتے ہوئے ان کی گرفتاری کے احکامات جاری ہوئے تھے ۔ تاہم جب اینٹی کرپشن کے محکمے نے یونیورسٹی پر چھاپہ مارا جو کہ مشکوک ثابت کیا ، کیونکہ وائس چانسلر کی اپنے آفس میں موجود گی کے باوجود ان کی بجائے دیگر غیر متعلقہ لوگوں کو حراست میں لیا گیا ۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے تمام معاملے پر انکوائری کمیٹی تشکیل دیتے ہوئے وائس چانسلر کو برطرف کیا۔

مذید پڑھیں : کراچی کالجز کے اساتذہ رینجرز کیخلاف DJ کالج گراؤنڈ میں جمع

واضح رہے کہ ڈاکٹر برفت نے سیاسی اثر و رسوخ کے ساتھ ساتھ دیگر حلقوں کے ذریعے بھی وزیر اعلیٰ سندھ کو انکوائری رپورٹ دبانے اور اپنے خلاف کاروائی رکوانے کےلئے کئی بار پیغامات بھجوائے لیکن مراد علی شاہ نے تمام سفارشات رد کرتے ہوئے فتح برفت کو عہدے سے ہٹانے کے احکامات جاری کرتے ہوئے صدیق کلہوڑو کو قائم مقام وائس چانسلر تعینات کر دیا ہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *