انڈونیشیا میں ماسک نہ پہننے پر ہولناک سزا

سزا کو تجویز کرنے کا مقصد وبا میں لا پروائی کرنے والوں کو موت کی قربت کا احساس دلانا ہے۔

جکارتہ : انڈونیشیا کے دارالحکومت میں کورونا وبا کی روک تھام کے لیئے عوامی مقامات پر فیس ماسک پہننے کی خلاف ورزی کرنے والوں کو موت کی ہولناکی کا مزہ چکھانے کے لیئے تابوت میں لیٹنے کی انوکھی سزا دی جا رہی ہے۔

مقامی اخبار کے مطابق جکارتہ میں جو شہری بغیر فیس ماسک کے پکڑا جائے تو اسے جرمانہ ادا کرنے اور تابوت میں لیٹنے میں سے کسی ایک سزا کا انتخاب کرنے کا کا کہا جاتا ہے ۔

مذید پڑھیں :‌ گستاخ ذاکرین بچانے اور حکومت پر وکلاء کا پریشر بڑھانے کی ناکام کوشش

سزا کا آغاز 3 ستمبر کو کیا گیا تھا اور اسی روز متعدد افراد نے فیس ماسک نہ پہننے پر 1 منٹ تک تابوت میں لیٹنے کی سزا کا انتخاب کیا ۔

اخبار کے مطابق خلاف ورزی کرنے والے کو ایسے تابوت میں لٹایا جاتا ہے جسے اوپر سے کھلا رکھا جاتا ہے ۔ اس سزا کو تجویز کرنے کا مقصد یہ ہے کہ وبا میں لاپروائی کرنے والوں کو شاید اسی طرح موت کی قربت کا احساس ہو جائے ۔

مذید پڑھیں : یومِ دفاع پر آئی ایس پی آر کا نیا گانا جاری

واضح رہے کہ اس وقت دنیا کے مختلف خطوں میں کورونا وائرس کی روک تھام کے حوالے سے مختلف صورت حال پائی جاتی ہے ۔ اگرچہ براعظم ایشیا میں اس کے پھیلاؤ کی رفتار کم ہو گئی ہے تاہم گزشتہ دنوں ایشیا میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 1 لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے ۔

Show More

شاکر احمد خان

شاکر احمد خان نوجوان صحافی ‛ بلاگر اور سماجی کارکن ہیں۔ حال ہی میں جامعہ کراچی سے شعبہ ابلاغ عامہ میں ماسٹر کیا ہے۔ وفاق المدارس کے بھی فاضل ہیں۔ آپ ایک بہترین معلم بھی ہیں۔ سماجی و معاشرتی مسائل سے متعلق لکھتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close