سندھ: انسانی حقوق کمیشن میں‌ انسانی حقوق کی خلاف ورزی

انسانی حقوق کی تنظیموں اور سول سوسائٹی نے حکومت سندھ سے مطالبہ کیا کہ قوانین کے تحت کمیشن میں چیئر پرسن تعینات کیا جائے۔

کراچی :‌سندھ میں انسانی حقوق کے کمیشن میں خود انسانی حقوق کی خلاف ورزی جا ری ہے، سندھ ہیومن رائٹس کمیشن کو خلاف ضابطہ چیئر پرسن کے ساتھ چلایا جا رہا ہے۔

کمیشن کے قوانین کے تحت کوئی بھی چیئر پرسن بہترین کارکردگی کے باوجود تیسری مدت کے لیے منتخب نہیں ہو سکتا لیکن سندھ ہیومن رائٹس کمیشن میں جسٹس ریٹائرڈ ماجدہ رضوی کو مسلسل تیسری مدت کے لیے تعینات کر رکھا گیا ہے ۔

مذید پڑھیں : مولانا فضل الرحمن کے بھائی کا 20 روز بعد PTI کی خواہش پر KPK ٹرانفسر

سندھ اسمبلی نے کمیشن کا قانون 2011 میں منظور کیا جبکہ عملی طور پر یکم مئی 2013 میں نگران وزیر اعلیٰ سندھ زاہد قربان علوی نے کمیشن کے قیام کی منظوری دی اور جسٹس (ر) ماجدہ رضوی کو کمیشن کو چیئر پرسن مقرر کیا گیا۔

ان کی پہلی مدت پوری ہونے پر دوسری مدت کے لیے بھی انہیں ہی چیئر پرسن تعینات کر دیا گیا۔ چیئرپرسن کی حیثیت سے ان کی دوسری مدت گزشتہ سال مئی پوری ہوئی تھی جس پر موزوں امید وار نہ مل سکنے کا بہانہ کرتے ہوئے نئے امیدوار تک انہیں تیسری مدت کے لیے چیئرپرسن رکھا کیا گیا۔

مذید پڑھیں : منگھو پیر میں واٹر بورڈ اور معدنیات کی زمین پر قبضے کا انکشاف

اب گزشتہ ایک سال سے وہ کمیشن میں تعینات ہیں لیکن نئے چیئر پرسن کو تعینات نہیں کیا گیا۔ اس ساری صورتحال پر انسانی حقوق کی تنظیمیں اور سول سوسائٹی حیران ہے کہ انسانی حقوق کے تحفظ کے لیے بنائے گئے کمیشن میں سب سے اہم عہدے کے لیے ہی حقوق غضب کیے جارہے ہیں اور اس چیز کا ارتکاب چیئرپرسن کی طرف سے کیا جارہا ہے۔

انسانی حقوق کی تنظیموں اور سول سوسائٹی نے حکومت سندھ سے مطالبہ کیا کہ قوانین کے تحت کمیشن میں چیئر پرسن تعینات کیا جائے تاکہ انسانی حقوق کا تحفظ یقینی بنانے کے ساتھ کمیشن صحیح معنوں میں فعال ہو سکے۔

Show More

عزت اللّٰہ خان

عزت اللّٰہ خان سینئر رپورٹر ہیں، پشاور پریس کلب کے ممبر ہیں، بعض موضوعات پر ان کی تحقیقاتی رپورٹس صف اول کے اخبارات میں تہلکہ مچا چکی ہیں۔ سرکاری اداروں میں کرپشن پر ان کی گہری نظر ہوتی ہے، معروف ویب سائٹس پر ان کے معاشرتی پہلوؤں پر بلاگز بھی شائع ہوتے رہے ہیں، آج کل الرٹ نیوز کے لیے لکھتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close