بیرون ممالک کے علماء بھی تحفظ بنیاد اسلام کیلئے میدان میں آگئے

لندن (برطانیہ) : یاد گار اسلاف حضرت مولانا قاری طیب عباسی کی زیر سرپرستی تحفظ بنیاد اسلام بل کی حمایت و دشمنان اسلام و پاکستان عناصر کی مذمت کرتے ہوئے حافظ عبد الخالق اعوان کے زیر اہتمام پریس کانفرنس منعقد کی گئی ۔

ان کا کہنا ہے کہ، پاکستان پنجاب اسمبلی نے 22/جولائی کو ایک بل بنام”تحفظ بنیاد اسلام بل ایکٹ 2020 ء”متفقہ رائے برائے ممبران پنجاب اسمبلی کے منظور کیا یے۔

مزید پڑھیں: تحفظ بنیاد اسلام بل کی مخالفت کرنے والے بیرونی طاقتوں کے آلہ کار ھیں

واضح رہے کہ، اس بل کی منظوری سے پاکستان میں کوئی فرد/ادارہ نبی مکرم صلی اللہ علیہ وسلم، دیگر انبیائے کرام علہیم السلام، کتب سماویہ یا اصحاب رسول و آل رسول رضوان اللہ علیہم کی شان رفیعہ میں کوئی گستاخی نہیں کرسکے گا۔ جس سے ملک میں فرقہ واریت کا سدباب ممکن ہوسکے گا۔

لیکن افسوس کہ، بل کے منظور ہوتے ہی کچھ دشمنان دین و وطن عناصر نے باضابطہ پریس کانفرنس کرکے کہا کہ وہ اصحاب رسول،خلفائے راشدین ،اور پیغمبر اسلام صلی اللہ علیہ وسلم کی تین صاحبزادیوں کو نہیں مانتے.

مزید پڑھیں: ”تحفظ بنیاد اسلام بل“ کےخلاف پراپیگنڈے سے فرقہ واریت میں اضافے کا امکان : قاری شبیر احمد عثمانی

انہوں نے کہا کہ اس سلسلہ میں بروز بدھ 29/ جولائی 2020 ء کو بوقت 3 تا 4 بجے تک TKHC سنٹر براڈ وے، ساوتھ ہال لندن (برطانیہ) میں ایک اہم پریس کانفرنس منعقد کی گئی، جس میں تمام سنی علماءو زعماء نے اپنی شرکت یقینی بنا کر سنی حقوق و مقدسات کی ترجمانی بخوبی ادا کی۔

انہوں نے اس بات کی بھی یقین دہانی کروائی ہے کہ، اسی نوعیت کے اجتماعات و پریس کانفرنس بیلجیئم، جرمنی اور مکہ مکرمہ میں بھی جلد ہی کی جائیں گی.ان شاءاللہ

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close