حکومت ملکی اور اپوزیشن ذاتی مفادات میں ترامیم چاہتی ہے،شاہ محمو د قریشی

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ حکومت ملکی اور اپوزیشن ذاتی مفادات میں ترامیم چاہتی ہے، حکومت کسی بھی معاملے میں بلیک میل نہیں ہوگی۔

وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر اور ملیکہ بخاری کے ہمراہ شاہ محمود قریشی کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن پاکستان کی خیر خواہ ہے تو ملکی مفاد میں قومی اسمبلی میں متعارف کرائے گئے بلز کی حمایت کرے، بھارت پاکستان کو بلیک لسٹ میں دھکیلنا چاہتا ہے، گرے لسٹ سے نکالنے یا رہنے کا فیصلہ اکتوبر میں ہو گا۔

انہوں نے کہاکہ پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنا اور وائٹ لسٹ میں لانا ہمارا عزم ہے، اس کے لیے ہم نے اپوزیشن کو اس قانون سازی کی دعوت دی لیکن انہوں نے اسے نیب قانون کی ترمیم سے مشروط کیا ہے۔

وزیر خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ ہم نے اپوزیشن کو مسودہ پیش کیا جو انہیں پسند نہیں آیا، سیاست میں دروازے بند نہیں ہوتے ہم ہر معقول بات سننے کو تیار ہیں۔

شہزاد اکبر نے کہاکہ قوم کو پاکستان کے گرے لسٹ میں جانے کی وجوہات کا علم ہونا چاہئے،ماضی کی حکومتوں کی کرپشن ،منی لانڈرنگ اور نا اہلی کے باعث یہ صورتحال پیدا ہوئی،ماضی کی حکومتوں نے اس حوالہ سے کوئی اقدامات نہیں کئے۔

انہوں نے مزید کہاکہ پاکستان 2018میں گرے لسٹ میں گیا، شریف خاندان نے ٹی ٹیز کے ذریعے منی لانڈرنگ کی،ان کی ٹی ٹیز کے پیسے منظور پاپڑ والے کے اکاﺅنٹ میں منتقل ہوئے، عوامی نمائندوں کو قومی مفاد میں قانون سازی میں اپنا کردار ادا کرنا چاہئے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *