کے الیکٹرک کے CEO نے زیادہ لوڈشیڈنگ کا اعتراف کر لیا

کے الیکٹرک

کراچی : کے الیکٹرک کے سی ای او مونس علوی نے کراچی میں بد ترین لوڈشیڈنگ کا اعترف کرتے ہوئے کہا ہے کہ شہر قائد میں اس وقت یقیناً لوڈشیڈنگ ہو رہی ہے اور زیادہ ہو رہی ہے ۔

مونس علوی نے کہا کہ جہاں لوڈشیڈنگ نہیں ہوتی تھی وہاں بھی ہو رہی ہے، کراچی میں زیادہ سے زیادہ ساڑھے سات سے آٹھ گھنٹے لوڈشیڈنگ ہو رہی ہے، لوڈشیڈنگ مستثنی علاقوں میں بھی ہو رہی ہے، اس وقت لوڈشیڈنگ تھوڑی زیادہ ہو رہی ہے ۔

مذید پڑھیں : بلدیاتی انتخابات میں JUI کا بھرپور حصہ لینے کا اعلان

مونس علوی کا کہنا تھا کہ کے الیکٹرک نے بینکس سے 85 ارب کا قرضہ لیا ہوا ہے، اس پر ہمیں سود ادا کرنا پڑتا ہے، کے الیکٹرک نے 2019 میں 280 ارب روپے کی بجلی سیل کی ہے، اس وقت صوبائی ، وفاقی حکومت نے 237 ارب روپے کے واجبات ادا کر نے ہیں۔

سی ای او کےالیکٹرک نے کہا کہ کچھ پلانٹس پرگیس پریشر کے مسائل ہیں، مستثنی علاقوں میں لوڈشیڈنگ کرنے سے ہمیں نقصان ہوتا ہے، 20 مارچ سے 28 مئی تک کراچی میں لوڈشیڈنگ نہیں کی ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *