حکومت کی رات میں مویشی منڈی جانے پر پابندی

حکومت پاکستان نے ملک میں پھیلی کورونا وائرس کی وبا کے پیش نظر عیدالاضحیٰ کے لیے قربانی کے جانوروں کی خریداری کے لیے مویشی منڈی جانے کا وقت صرف دن کا ہی مقرر کیا ہے جبکہ رات میں منڈی جانے پر پابندی ہوگی-

وفاقی وزیر منصوبہ بندی اور نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر (این سی او سی) کے سربراہ اسد عمر کی زیر صدارت این سی او سی کا اجلاس ہوا جس میں صوبائی چیف سیکریٹریز نے ویڈیو لنک کے ذریعے شرکت کی-

اس اجلاس میں عید الاضحیٰ کے لیے لگائے جانے والی مویشی منڈیوں کے انتظام اور ایس او پیز سے متعلق جائزہ لیا گیا-

مزید پڑھیے: ڈیری فارمرز نے پنجاب اور سندھ کی مویشی منڈیاں‌ کھولنے کی اجازت مانگ لی

اجلاس کے دوران شرکا کو بتایا گیا کہ ملک بھر میں 700 مویشی منڈیاں قائم کی گئی ہیں، تمام متعلقہ افراد کو ایس او پیز فراہم کر دی گئی ہیں-

اسد عمر نے کہا کہ حکومت کی طرف سے اٹھائے گئے بروقت اقدامات سے کورونا کے زیادہ پھیلاوَ کو روکا گیا-

انھوں نے یہ بھی کہا کہ ملک بھر میں 321 مقامات پر اسمارٹ لاک ڈاؤن جاری ہے، اسمارٹ لاک ڈاؤن کے ذریعے 3 لاکھ افراد کو کورونا سے بچایا گیا ہے، این سی او سی نے 3 شہروں میں کورونا کے تیزی سے پھیلاؤ کی نشاندہی کی-

مویشی منڈیوں‌سے متعلق وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ دیہات اور شہروں کے درمیان مویشیوں اور افراد کی نقل و حرکت سے کورونا پھیلنے کا خدشہ ہے، کورونا کے پھیلاوَ کو روکنے کے لیے مویشی منڈیوں کا بہتر نظم نسق ناگزیر ہے-

مزید پڑھیے: عید الاضحی پر عوام کی لاپرواہی کروناکو ایک بار پھر بے قابو کرسکتی ہے، گورنر پنجاب

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ مویشی منڈیوں کی تعداد میں اضافہ کیا جائے گا تاہم ان کا حجم چھوٹا ہوگا، مقررہ حد سے زیادہ سے لوگوں کو منڈی آٰنے کی اجازت نہیں ہوگی جبکہ شہر کے اندر کسی کو مویشی منڈی لگانے کی اجازت نہیں دی جائے گی-

منڈی کے اوقات کار بتاتے ہوئے انھوں نے کہا کہ مویشی منڈیوں میں ماسک کے استعمال اور سماجی فاصلوں کو یقینی بنایا جائے گا-

عوام کو متنبہ کرتے ہوئے اسد عمر کا کہنا تھا کہ مویشی منڈیوں کے اوقات کار صبح 6 سے شام 7 بجے تک ہوں گے، مویشی منڈیوں کے داخلی راستوں پر اسکرینگ بھی کی جائے گی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *