حکومت سندھ اور پولیس کی کارکردگی قابل تعریف کیوں ؟

تحریر : سہیل سمیح دہلوی

یوں تو پاکستان اپنے وجود کے بعد سے ہی ہندوستان کی بربریت کا شکار رہا مگر اس کی تمام سازشوں کے باوجود پاک فوج کے جوانوں نے اپنا خون بہا کر اس سرزمین اور عوام کی حفاطت کی یہ ان جوانوں کی قربانیوں کا صدقہ ہے آج ہم سکون سے سوتے ہیں کیوں کے ہمیں بھروسہ ہے۔

اپنے ان شیردل جوانوں پر دان رات جاگ کر ہماری حفاطت کرتے ہیں۔مگر آج سلام ان پولیس کے سپاہیوں پر جنھوں نے اسٹاک ایکسچینج میں اپنے سینوں پر گولیاں کھا کر ہندوستان کے تربیت یافتہ دہشتگردوں کو آٹھ منٹ میں جہنم رسید کر کے مودی کتے کو یہ پیغام دیا۔

مزید پڑھیں : سندھ پولیس آئمہ سے باجماعت نہ پڑھانے کا حلف نامہ لینے لگی

پاکستان آرمی تو دور کی بات تمہارے پالتوں کتوں کا سر کچلنے کیلئے سندھ پولیس کے سپاہی ہی کافی ہیں۔یہ پہلا واقعہ نہیں اس سے پہلئے چینی ایمبسی پر بھی ہندوستان کے بھیجئے گئے دہشتگروں کو بھی اسی سندھ پولیس نے جہنم رسید کیا تھا۔سلام ان سپاہیوں پر جنھوں نے ان دونوں واقعیات میں اپنی جانوں کا نزرانہ دیا اور اپنے ملک اور ادارے کا نام روشن کیا۔

سلام ان افسران پر جنھوں نے انکو اعلی تربیت دی فرض شناسی کی اور ایماندار کی بیشک سندھ پولیس نے کورونا وائرس کی وبا میں بھی پوری ایمانداری سے اپنی ڈیوٹی آج تک نبھا رہئے ہے۔اس وبا میں آج تک سندھ پولیس کے 16 سپاہی اور افسران جام شہادت نوش کرچکئے ہیں۔مگر اس وبا میں بھی وہ اپنے فرائض اسی جذبے حوصلئے اور لگن سے اس شدید گرمی میں ادا کر رہے ہیں۔

اس کے علاوہ نیوکراچی سب ڈویژن میں ہائی کورٹ آف سندھ کے واضح احکامات کے عین برعکس سرکاری زمین پر پورے ضلع میں سب سے زیادہ بچت بازار لگائے جاتے ہیں۔ نیوکراچی خمیسو گوٹھ کے واسیوں کے لیے اپنا علاقہ منشیات سے پاک دیکھنا ایک خواب بن چکا ہے۔ پولیس چھاپوں کے باوجود منشیات کی فروخت کئی سوالات کو جنم دیتا ہے۔

مزید پڑھیں : پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر حملہ ملک کی شہ رگ اور معیشت پر حملہ ہے: قاری محمد عثمان

خمیسو گوٹھ میں ہی بجلی ، پانی اور گیس کی فروخت کی جاتی ہے۔ خمیسو گوٹھ سے متصل لیاری ندی کی زمین کو چند لوگوں نے بیچ ڈالا۔ نیوکراچی میں سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے قواعد ضوابط کی بے توقیری عام بات ہے۔ کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کی مین لائنوں سے بھی درجنوں غیر قانونی کمرشل کنکشنز لیے گئے ہیں۔ لیاری ندی سے متصل مٹی کا سامان بنانے والے افراد بھی حکومتی SOPپر عمل کرنا اپنی توہین سمجھتے ہیں۔

میری آج سندھ پولیس کے افسران سے ایک چھوٹی سی درخواست ہے۔کچھ ناعقبت اندیش چند پیسے کی لالچ میں نیوکراچی سب ڈویژن اور خصوصیت کے ساتھ بلال کالونی او نیوکراچی انڈسٹریل ایریا پولیس اسٹیشنز کی حدود میں گٹکے کے کام کو بڑے پیمانے پر منظم انداز میں جلانے میں مدد فراہم کر رہے ہیں جہاں منوں کے حساب سے گٹکا تیار ہو کر پورے ضلع میں سپلائی ہوتا ہے۔ گٹکا انسانی صحت کیلئے انتہائی مضر ہے جس سے انسان کینسر جیسے مرض مبتلا ہوجاتا ہے۔گٹکا کراچی شہر میں کینسر کے پھلاو کا خطرناک ذریعہ بن رہا ہے اسی وجہ سے اعلی عدلیہ نے اس کو سنگین جرم قرار دیا سندھ حکومت نے اسمبلی میں اس کے خلاف قانون سازی کی اور اس کو بنانے اور فروخت پر سخت سزا رکھی ہے بیشک اس میں سندھ پولیس کے اعلی ترین افسران شریک نہیں ہونگے۔

مزید پڑھیں : پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر دہشت گردوں کا حملہ ناکام

میری آپ سے درخواست ہے ان عوام دشمن عناصر کو بھی ان دہشتگردوں کی طرح جہنم رسید کریں اور عوام کو اس زہر سے بچائیں اور سندھ پولیس کی رٹ کو چیلنج کرنے والا ان مفاد پرست اور عوام دشمن عناصر کو معاشرے کے سامنے نشان عبرت بنائیں۔بیشک سندھ حکومت اور سندھ پولیس کی ان مشکل حالات میں کارکردگی قابل تعریف ہے۔ اللہ پاک نبی اکرم ﷺ اورآپ کی آل اولاد اور صحابہ رضوان اللہ علیہم اجمعین کے صدقے ہمارے حال پر رحم فرمائے۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close