کراچی: عباسی اسپتال کے ڈاکٹرز کی بچہ وارڈ بند کرنے کی دھمکی

کراچی کے عباسی شہید اسپتال کے بچوں کے وارڈ کے کوروناوائرس کی لپیٹ میں آنے کے بعد اب تک 21 ڈاکٹرز میں وائرس کی تصدیق ہوچکی.

کورونا سامنے آنے کے بعد شعبہ پیڈیاٹرک کے انچارج پروفیسر اور دیگر عملے نے وارڈ کو بند کرنے کی دھمکی دے دی۔

اس حوالے سے معلوم ہوا ہے کہ بچوں کے وارڈ سے منسلک ہاؤس آفیسر ڈاکٹر ریحانہ ملک، ڈاکٹر فاریہ فاطمہ، آر ایم او ڈاکٹر امبر اور پوسٹ گریجویٹ اسٹوڈنٹ ڈاکٹر رابعہ کا کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد انہیں اپنے گھروں پر قرنطینہ ہونے کی ہدایت کردی گئی ہے.

مجموعی طور پر اب تک اس وارڈ کی سینئر ڈاکٹر امبر 8 دیگر ہاؤس آفیسرز، 2 آر ایم اووز، 5 پی جی ، ڈاکٹرز سحرش رحمان، اسما آغا، شایان رحمانی کائنات شیخ سمیت 21 ڈاکٹر کا کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد وارڈ کے دیگر ڈاکٹرز و عملے میں خوف و ہراس پیدا ہوگیا ہے جس کی وجہ سے ڈاکٹرز نے ضروری حفاظتی انتظامات نہ ہونے کی وجہ سے وارڈ بند کرنے کی دھمکی دے دی ہے۔

اس ضمن میں سینئر ڈائریکٹر میڈیکل و ہیلتھ سروسز ڈاکٹر بیربل سے رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی تو ان سے رابطہ نہیں ہوسکا تاہم ایک سینئر ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ ابھی تک وارڈ کو بند تو نہیں کیا گیا البتہ ڈاکٹرز نے اپنے ذرائع سے حفاظتی انتظامات کرلیے ہیں اور وارڈ میں فیومیگیشن کرالیا گیا ہے.

تاہم میئر کراچی وسیم اختر کی جانب سے اسپتال کے حفاظتی انتظامات کے لیے کوئی ہنگامی اقدامات نہیں کیے جاسکے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *