کرپٹ افسران، ہائیڈرینٹ مافیاء، ٹریفک پولیس کا گٹھ جوڑ، عوام پانی کوترس گئے

کراچی واٹر بورڈ کے کرپٹ افسران، ہائیڈرینٹ مافیاء، ملیر ٹریفک پولیس اور دیگر اداروں کے گٹھ جوڑ کے باعث عوام پانی کی بوند بوند کو ترس گئے ہیں.

لاک ڈاؤن کھلتے ہی دو ماہ ہونے کو ہیں شہر کے مختلف علاقوں میں پانی کا بحران شدت اختیار کرگیا شدید گرمی اور حبس میں شہری رٌل رہے ہیں.

مظفرآباد مجید کالونی لیبر اسکوائر مسلم آباد شیرپاؤ فردوس چالی معین آباد اور انکے مضافاتی علاقوں سمیت شہر کے دیگر علاقوں لانڈھی کورنگی ملیر شمسی سوسائٹی ناتھا خان شاہ فیصل کالونی اور انکے مضافاتی علاقوں میں عوام پانی کی بوند بوند کو ترس گیے

سندھ ہائی کورٹ کے واضح حکم کے باوجود کہ ایک ضلع میں اسی ضلع کےلیے صرف ایک ہی ہائڈرینٹ کی قانون اجازت دیتا ہے.

مزید پڑھیے: دو غیر قانونی ہائیڈرنٹس بند ، 25 ملزمان گرفتار ، 25 ٹینکر قبضہ میں لے لئے گئے

مگر ضلع ملیر میں خلاف ظابطہ غیر قانونی طور پر چار ہائڈرینٹ قائم ہیں اور ان چاروں ہائڈرینٹ پر پانی وافر مقدار میں موجود ہے جبکہ قریبی آبادیاں تھر کا منظر پیش کر رہی ہیں.

متعلقہ تھانے اس پر ایکشن سے کیوں گریزاں ہیں اس کا جواب متعلقہ تھانوں کے حدود کے ایس ایچ اوز اور ایس پی ملیر یا ایس ایس پی ملیر پر چھوڑتے ہیں.

ذرائع کے مطابق ایس ایس پی ملیر ٹریفک پولیس شمیم آرا پنہور کے دونوں ہاتھ اور سر مکمل کڑاہی میں ہے.

ملیر کی حدود میں غیر قانونی چنچی رکشوں کی سرپرستی کے علاوہ ہائڈرینٹ مافیاء سے بھاری معاوضے کی مد میں مکمل سرپرستی کررہی ہیں.

مزید پڑھیے: واٹر بورڈ ہائیڈرنٹ ٹھیکدار نے گلشن اقبال کھیل کے گراونڈ پر ٹینکر کھڑے کرا دیئے

عوامی ایکشن کمیٹی پاکستان کو ذرائع سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق انتہائی خستہ حال واٹر ٹینکرز جو مختلف جگہوں پر اب تک درجنوں افراد کی جان لےچکے ہیں اور درجنوں زخمی ہوچکے ہیں.

ان ٹینکروں سے رستا پانی اب تک اربوں روپے کے روڈ اور املاک تباہ کرچکے ہیں اور یہ سلسلہ اب بھی دھڑلےسے جاری ہے زرائع کے مطابق روڈ مینٹنینس کے نام پر لی جانے والی رقم قومی خزانے کے بجاے قارون کے خزانے میں جمع کی جارہی ہے جو بعد میں آپس میں تقسیم کردی جاتی ہے

ایس ایس پی ملیر شمیم آرا پنہور کو بھاری نظرانے کے عوض ٹریفک پولیس کسی قسم کی کاروائی سے گریزاں ہے ٹینکر مافیاء کو انکی مکمل سرپرستی حاصل ہے

عوام کا مطالبہ ہے کہ سندہ حکومت، آئی جی سندھ اور چیف جسٹس پاکستان اس تمام تر صورتحال کا فوری نوٹس لے کر کارروائی کریں.

عوام گزارش کرتی ہے پانی کے متاثرہ علاقوں کو ہنگامی بنیادوں پر پانی فراہم کیا جاے اور غیر قانونی ہائڈرینٹ بند کیے جایں اور ان علاقوں میں موجود واٹر بورڈ انتظامیہ ایس ایس پی ٹریفک پولیس کو فوری معطل کرکے شفاف انکوائری کی جائے اور قانون کے مطابق ان کے خلاف کارروائی کی جائے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *