مولانا گل رفیق پر حملہ قابل مذمت اور ناقابل برداشت ہے : علماء

کراچی : مولانا گل رفیق پر حملہ قابل مذمت اور نا قابل برداشت ہے ، انتظامیہ کی نااہلی کی وجہ سے حملہ آور تا حال دندناتے پھر رہے ہیں ، ان خیالات کا اظہار جمعیت علماء اسلام ضلع غربی کی مجلس عاملہ کا اجلاس سے رہنماؤں نے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اجلاس ضلعی امیر اور سابق پارلیمانی لیڈر سندھ اسمبلی مولانا عمر صادق کی صدارت میں منعقد ہوا ۔

اجلاس میں ناظم عمومی مولانا فخر الدین رازی سر پرست ڈاکٹر عطاءالرحمن خان ، نائب امیر مولانا ڈاکٹر نصیر الدین سواتی، قاری یونس قاسمی، مولانا عبدالقادر بلوچ، حاجی محمود خلجی، حافظ حبيب الرحمن خاطر، قاری سعید مہمند، مولانا عطاء اللہ بلوچ، مولانا معاویہ، مولانا غلام اللہ ، مولانا شمس الدین و دیگر نے شرکت کی ۔

مذید پڑھیں : عوام دشمن PPP نے فرقہ پرست تنظیم کا روپ دھار لیا : علامہ اورنگزیب فاروقی

اجلاس میں جے یو آئی رہنماء مولانا گل رفیق حسن زئی پر قاتلانہ حملے کے بعد کی صورت حال پر غور کیا گیا اور مولانا گل رفیق حسن زئی پر قاتلانہ حملے میں ملوث افراد کی تا حال عدم گرفتاری پر انتہائی تشویش کا اظہار کیا گیا ، اجلاس میں طے پایا کہ ضلعی قائدین حکام بالا سے ملاقات کریں گے ۔

اجلاس میں مطالبہ کیا گیا مولانا گل رفیق پر حملے آوروں کو فوری طورپر گرفتار کیا جائے ، درندہ صفت حملہ آوروں کا دن دیہاڑے جے یو آئی کے پرامن رہنماء مولانا گل رفیق پر حملہ انتظامیہ کا کراچی میں امن وامان کی بحالی کے دعووں میں ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے ، جے یو آئی ضلع غربی کے امیر مولانا عمر صادق نے کہا کہ ہمارے کارکنان کو خونیں واقعے پر حکومتی تسلی یا ہمدردی نہیں عملی اقدامات کی ضرورت ہے۔

مزید پڑھیں : عقیدہ ختم نبوت پر کوئی سمجھوتا نہیں!!

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ جلد ہی حکام بالا سے ملاقات کرکے انہیں صورتحال سے آگاہ کیا جائے گا ۔جے یو آئی رہنماؤں نے مولانا گل رفیق حسن زئی پر قاتلانہ حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے ان کی جلد صحت یابی کیلئے دعا کی ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *