ہری پور جرائم پیشہ گروہوں کی گرفتاری پر عوام کی جانب سے پولیس کی ستائش

ہری پور : ہری پور کی سو سائٹی کی جانب سے پولیس کی کار کردگی کو سراہانا محکمہ پولیس کے لئے فخر کا باعث ہے ۔ ڈی پی او ہری پور

ڈی پی او آفس ہری پور میں ہری پور پولیس کے افسران کے اعزاز میں تقریب تقسیم انعامات کا انعقاد کیا گیا، جس میں ڈی پی او ہری پور سید اشفاق انور (پی ایس پی)، ایس پی شعبہ تفتیش سید عنائیت علی شاہ شیرازی ، صدر آل ٹریڈ ایسوسی ایشن ہری پور افتخار امین خان ، یونائیٹڈ میڈیسن کے اونر سمیت پولیس افسران نے شرکت کی ۔

حالیہ دنوں میں ہری پور پولیس کی جانب سے چوری، ڈکیتی اور موٹر سائیکل چوری کی متعدد وارداتوں میں ملوث متعدد گروہوں کے ملزمان کو گرفتار کر کے تمام مسروقہ مال برآمد کیا گیا ۔ ہری پور کی تاجر برادری اورمتاثرین کی جانب سے بروقت کاروائی پر ہری پور پولیس کی کارکردگی کو خراج تحسین پیش کیا گیا۔ ڈی پی او آفس ہری پور میں منعقدہ تقریب میں ڈی ایس پی سرکل ہیڈ کوارٹر افتخار خان، ڈی ایس پی سرکل خانپور ذاکر خان، ایس ایچ او تھانہ سٹی، کوٹ نجیب اللہ، تفتیشی افسران سمیت دیگر افسران پولیس نے شرکت کی۔

مذید پڑھیں : جمیعت علمائے اسلام کے رہنما مولانا گل حسن زئی پر دن دیہاڑے حملہ

جملہ پولیس افسران کو بہترین کارکردگی پر تعریفی سرٹیفیکیٹس اور نقد انعامات سے نوازا گیا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈی پی او ہری پور نے کہا کہ ضلع میں ڈکیتیوں کے تمام کیسسز کو ٹریس کرنے اورملزمان کی گرفتاری میں ہری پور پولیس کے تمام افسران نے محنت سے کام کیا جس پر میں تمام افسران کو مبارک باد پیش کرتا ہوں ۔ افسران پولیس اپنی صلاحیتوں کو بروئے کار لا کر عوام کے جان و مال کے تحفظ کو یقینی بنائیں تاکہ لوگوں کو تحفظ کا احساس ہو اور پولیس اور عوام کے درمیان باہمی اعتماد کے روابط مضبوط ہوں۔

ہری پور کی تاجر برادری اور سول سو سائٹی کی جانب سے افسران کی کارکردگی کو سراہا جانا ، ہری پور پولیس پر عوامی اعتماد کا مظہر ہے ۔ اور محکمہ پولیس کے لئے فخرکا باعث ہے ۔ افسران پولیس جرائم کے خاتمہ کے لئے محنت سے کام کریں اور تمام کیسز میں میرٹ پر تفتیش کو یقینی بنایا۔ محکمہ پولیس میں محنتی اور قابل افسران کو ہمیشہ قدر کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے ۔ ڈی پی او ہری پور نے تقریب کے اختتام پر صدر ٹریڈرز ایسوسی ایشن کا شکریہ ادا کیا ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *